، مگر زچہ بچہ ابھی تک ہسپتال میں کیوں ؟

لاہور (ویب ڈیسک) بینظیر بھٹو مرحومہ اور آصف زرداری کی بڑی صاحبزادی بختاور بھٹو نے کہاہے کہ بیٹے کی آمد 8نومبر کو متوقع تھی لیکن اس نے 10اکتوبر کو دنیا میں آکر ہم سب کو حیران کردیاہے۔ٹوئٹرپیغام میں انہوں نے بتایاکہ انکے ہاں بیٹے کی پیدائش وقت سے تقریبا ایک ماہ پہلے ہوئی ہے

جسکے باعث نومولود کو طبی مسائل کے پیش نظر بچوں کے انتہائی نگہداشت یونٹ میں رکھا گیا ہے۔بختاور بھٹو نے کہا کہ بیٹے کی پیدائش پر آپ سب کی محبتوں اور چاہتوں کا شکریہ۔انہوں نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ بیٹا فی الحال این آئی سی یو میں ہے لیکن رو بہ صحت ہے، اسے اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں۔ آپ کو بتاتے چلیں کہ سابق صدر آصف علی زرداری کی بڑی بیٹی بختاور بھٹو کے گھر بیٹے کی پیدائش ہوئی ہے جس پر انہیں ہر طرف سے مبارک بادیں موصول ہو رہی ہیں ، بختاور بھٹو نے نیک خواہشات کا اظہار کرنے والوں کا شکریہ ادا کیا۔تفصیلات کے مطابق بختاور بھٹو کے گھر 10 اکتوبر کو بیٹے کی پیدائش ہوئی تھی ، انہوں نے بیٹے کو متحدہ عرب امارات میں جنم دیا ، انہوں نے اپنے جھولی بھرنے کی خوشخبری ایک دن بعد 11 اکتوبر کو انسٹا گرام پر پیغام جاری کرتے ہوئے سنائی ۔بختاور بھٹو نے اپنی ٹوئٹ میں کہا کہ ان کے ہاں بیٹے کی پیدائش آئندہ ماہ 8 نومبر کو ہونی تھی مگر ننھے مہمان نے اپنی مرضی چلائی اور وہ دنیا میں 10 اکتوبر کو آئے۔آصف علی زرداری کی صاحبزادی نے لکھا کہ بچے کی ایک ماہ قبل پیدائش پر وہ سب خوشگوار حیرت میں مبتلا ہیں۔بختاور بھٹو زرداری نے یہ بھی بتایا کہ پیدائش کے بعد ان کا بیٹا نوزائیدہ بچوں کے نگہداشت کے وارڈ میں ہے، جہاں ان کی طبیعت بہتر ہو رہی ہے۔انہوں نے بیٹے کی مکمل صحت یابی کے لیے لوگوں سے دعا کی اپیل بھی کی اور تمام افراد کا شکریہ ادا کیا

Comments are closed.