آئیے میں آپ کو اپنے جہاز میں شمالی کوریا پہنچا دوں ۔۔۔۔۔۔ بی بی سی کا انوکھا انکشاف

واشنگٹن (ویب ڈٰسک) بی بی سی کی ایک رپورٹ کے مطابق ۔۔۔۔۔۔۔امریکہ کے سابقہ صدر ٹرمپ کی شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان کے ساتھ ملاقاتیں ان کی صدارت کے سب سے دلکش لمحات میں شامل تھیں۔بی بی سی کی ایک نئی سیریز ’ٹرمپ ٹیکس آن دا ورلڈ‘ کی تیسری اور آخری قسط میں

ہمیں یہ نئی تفصیلات ملیں ہیں کہ یہ سربراہی اجلاس کیسے منعقد ہوئے اور جب ان دونوں افراد کی ملاقات ہوئی تو انھوں نے اس دوران کمرے میں موجود لوگوں سے کیسے اور کیا بات کی۔ اس سیریز کے ڈائریکٹر ٹم اسٹرائیکر ہیں۔جو کچھ انھوں نے دیکھا وہ انتہائی ماہر سفارت کاروں کو بھی دنگ کر گیا خاص کر تب جب ٹرمپ نے شمالی کوریا کے آمر کو گھر چھوڑنے کے لیے ایئر فورس ون میں لفٹ دینے کی پیش کس کی۔ویتنام کے شہر ہنوئی میں، کم جونگ ان کے ساتھ ٹرمپ کا دوسرا سربراہی اجلاس منصوبہ بندی کے مطابق نہیں گیا اور جب شمالی کوریا کے جوہری پروگرام کے بارے میں بات چیت کا سلسلہ آگے نہیں بڑھ سکا تو ٹرمپ اچانک پریس کو یہ کہتے ہوئے روانہ ہو گئے: ’کبھی کبھی آپ کو پیدل چلنا پڑتا ہے۔‘لیکن جانے سے پہلے اس وقت کے امریکی صدر نے کم کو ایک حیرت انگیز پیش کش کی تھی۔ٹرمپ کی قومی سلامتی کونسل کے ایشیا کے ماہر میتھیو پوٹینجر نے ہمیں بتایا: سابق صدر ٹرمپ نے کم کو ایئر فورس ون میں گھر تک لفٹ دینے کی پیش کش کی تھی۔ صدر کو معلوم تھا کہ کِم، بذریعہ چین کئی دنوں تک ٹرین میں سفر کرنے کے بعد ہنوئی پہنچے ہیں لہذا ٹرمپ نے کہا : ’اگر آپ چاہیں تو میں آپ کو دو گھنٹے میں گھر چھوڑ سکتا ہوں۔ کم نے انکار کر دیا۔‘

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *