اسد عمر کے بھائی محمد زبیر نے حیران کن بات کہہ ڈالی

کراچی (ویب ڈیسک) تحریک انصاف کے رہنما فیصل جاوید خان نے کہا ہے کہ علی حیدر گیلانی کی ویڈیو کی تحقیقات ہونی چاہئے، سینیٹ انتخابات میں ووٹ ضائع کروانا جرم ہے،وزیراعظم ہر سطح پر بدعنوانی کا خاتمہ جبکہ اپوزیشن ہر سطح سےبدعنوانی کا تحفظ چاہتی ہے، علی حیدر گیلانی ویڈیو میں موجود

پی ٹی آئی ایم این ایز کے نام بتائیں، حفیظ شیخ اعلیٰ سطح کے ماہر معیشت ہیں ان پر بدعنوانی کا کوئی الزام نہیں ہے۔ وہ نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں میزبان حامد میر سے گفتگو کررہے تھے۔ پروگرام میں مسلم لیگ ن کے رہنما محمد زبیر اور وزیراطلاعات سندھ ناصر حسین شاہ بھی شریک تھے۔محمد زبیرنے کہا کہ علی حیدر گیلانی کا اراکین اسمبلی کو ووٹ ضائع کرنے کا طریقہ بتانا صحیح عمل نہیں ہے، ان کے عمل سے یوسف رضا گیلانی کی اخلاقی پوزیشن کمزور نہیں ہوگی، حفیظ شیخ دو چار ووٹوں سے جیتے تو عمران خان کی شکست ہوگی،پہلے کسی طرف سے دباؤ نہیں آرہا تھا لیکن اب آنا شروع ہوگیا ہے، حفیظ شیخ کی پاکستان سے وفاداری نہیں انہیں ووٹ نہ دیا جائے، اصل مقابلہ حفیظ شیخ بمقابلہ اسد عمر ہے۔ناصر حسین شاہ نے کہا کہ پی ٹی آئی کے دیئے گئے ٹکٹوں پر پارٹی ارکان کو تحفظات ہیں، پی ٹی آئی اراکین ضمیر کے مطابق یوسف رضا گیلانی کو ووٹ دے سکتے ہیں، سندھ اسمبلی میں پیپلز پارٹی کے نشستوں سے زیادہ سینیٹرز بن سکتے ہیں، ہمارے پاس 16ووٹ زیادہ ہیں مزید چار پانچ ووٹوں کی ضرورت ہے۔تحریک انصاف کے رہنما فیصل جاوید خان نےکہا کہ وزیراعظم عمران خان الیکشن میں شفافیت کے ساتھ کھڑے ہیں، سینیٹ انتخابات شفاف بنانے کیلئے آئینی ترمیم لائے جو اپوزیشن نے مسترد کردی، قانون کہتا ہے اسمبلیوں میں پارٹی پوزیشن کے مطابق سینیٹ میں نمائندگی ہوگی، وزیراعظم ہر سطح پر بدعنوانی کا خاتمہ جبکہ اپوزیشن ہر سطح سے بدعنوانی کا تحفظ چاہتی ہے، الیکشن کمیشن بدعنوانی کی پریکٹسز کیخلاف اقدامات اٹھانے کا پابند ہے،علی حیدر گیلانی کی ویڈیو کی تحقیقات ہونی چاہئے، سینیٹ انتخابات میں ووٹ ضائع کروانا جرم ہے۔فیصل جاوید خان کا کہنا تھا کہ عمران خان نے گزشتہ سینیٹ الیکشن میں ہارس ٹریڈنگ پر اپنے 20ایم این ایز کو نکالا، علی حیدر گیلانی ویڈیو میں موجود پی ٹی آئی ایم این ایز کے نام بتائیں، پیپلز پارٹی دو نمبری کیوں کررہی ہے ،یہ کہتے ہیں ضمیر کی آواز ہے تو پھر کھل کر سامنے آؤ، قومی اسمبلی میں سینیٹ انتخابات پر ہمارا بل چھ مہینے سے پڑا ہوا ہے کیوں نہیں مانتے، اپوزیشن قومی مفاد کی ہر قانون سازی پر این آر او مانگنے لگ جاتی ہے۔

Comments are closed.