اسلام آباد ہائیکورٹ سے بڑی خبر

اسلام آباد (ویب ڈیسک) اسلام آباد ہائیکورٹ نے پی ٹی وی کے چیئرمین نعیم بخاری و دیگر تعیناتیوں کیخلاف کیس میں اٹارنی جنرل سے 14 جنوری کو دلائل دینے اور وزارت اطلاعات و نشریات کے مجاز افسر کو بھی طلب کر لیا ہے ۔ چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دئیے کہ نعیم بخاری

کی تعیناتی بظاہر سپریم کورٹ کے فیصلے کی خلاف ورزی ہے ، نعیم بخاری ہمارے لئے قابل احترام لیکن ہم سپریم کورٹ کے فیصلے کو نظر انداز نہیں کر سکتے۔ منگل کو چیف جسٹس اطہر من اللہ نے چیئرمین پی ٹی وی نعیم بخاری سمیت دیگر تعیناتیوں کیخلاف درخواستوں کی سماعت کی۔ کیس کی سماعت کے دوران نعیم بخاری کے وکیل محمد حماد نے کہا کہ درخواستوں میں اعتراض اٹھایا گیا ہے کہ چیئرمین کی تعیناتی کیلئے اشتہار نہیں دیا گیا جبکہ وفاقی حکومت کو اختیار ہے کہ وہ پرائیویٹ ڈائریکٹر تعینات کر سکتی ہے۔

Comments are closed.