اسلام آباد ہائیکورٹ کے ایک جملے نے احتساب کی ہنڈیا بیچ چوراہے پھوڑ دی

اسلام آباد (ویب ڈیسک)اسلام آباد ہائیکورٹ نے ایل این جی ریفرنس میں مفتاح اسماعیل کی ضمانت کا تفصیلی فیصلہ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسا کوئی مواد سامنے نہیں لایا گیا جو مفتاح اسماعیل کا تعلق بادی النظر میں کسی جرم سے جوڑے ۔چیف جسٹس اطہر من اللہ نے 23دسمبر 2019 کو دی گئی

ضمانت کا تفصیلی فیصلہ جاری کیاجس میں کہاگیاکہ نیب نے جو خزانے کو نقصان کا تخمینہ لگایا وہ مفروضے پر مبنی تھا، مفتاح اسماعیل پر ٹرمینل ون کے معاہدے اور کنسلٹنٹس کی تعیناتی سے متعلق الزام لگایا گیا۔

Sharing is caring!

One response to “اسلام آباد ہائیکورٹ کے ایک جملے نے احتساب کی ہنڈیا بیچ چوراہے پھوڑ دی”

  1. mian qureshi says:

    Shàme ….. NAB

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *