اس بلا جواز تنقید کا انضمام الحق نے کیا شاندار جواب دیا تھا ؟

لاہور (ویب ڈیسک) نامور کالم نگار محمد عامرخاکوانی اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔کچھ عرصہ قبل شعیب اختر نے اپنے یوٹیوب چینل پر انکشاف کیا کہ دانش کینیریا کے ساتھ غلط ہوتا رہا، ان کے ساتھ ناروا سلوک رکھا گیا۔ اس کے بھی کوئی شواہد نہیں ملتے۔ دانش کینیریا کے ساتھی

کرکٹراس تاثر کی تردید کرتے ہیں۔ شعیب اختر نے ممکن ہے اپنے وی لاگ کو سنسنی خیز بنانے کے لئے ایسا کیا ہو۔ ویسے یہ بھی ممکن ہے کہ جونیئر کھلاڑی ہونے کے ناتے دانش کینیریا کو کچھ رگڑا لگ گیا ہو، مگر اس میں ہندو، مسلمان کی کوئی تمیز نہیں ۔ قومی کرکٹ ٹیم میں ہر جونیئر کھلاڑی کو کچھ رگڑا لگتا ہی ہے۔ خود عمران خان جب جونئیر تھے تو ان کے سینئر کھلاڑی مشتاق محمد نے انہیں چائے لانے کا کہہ دیا، عمران خان اس پر تلملا اٹھے تھے۔عمران خان نے اپنی کتاب میں وہ واقعہ بھی بیان کیا ہے جس میں سعید احمد نے انہیں دانستہ کمرے سے نکلوانے کی پلاننگ کی اور کپتان، مینجر سے گوشمالی کرائی۔ سابق کرکٹر اور حالیہ ٹی وی اینکرپی جے میر2007ورلڈ کپ میں ٹیم مینجر تھے۔ قومی ٹیم ہار گئی تو انہوں نے الزام لگایا کہ کھلاڑی تمام وقت تبلیغی سرگرمیوں میں لگے رہتے تھے اور جہاز میں بھی آذان دے کر نماز پڑھنے لگے۔ اس وقت کے چیئرمین کرکٹ بورڈ نے میر کے ساتھ اپنی دوستی کے باوجود اس الزام کی تردید کی اور وضاحت کی کہ ایسے کوئی شواہد نہیں ملے۔ انضمام الحق نے اس پر دلچسپ تبصرہ کیاتھا کہ جہاز میں ہم بیٹھے فلمیں دیکھتے رہیں، گانے سنیں، کسی کو اعتراض نہیں، نماز پڑھ لی تو غلط کر ڈالا؟ انضمام الحق پر کئی حوالوں سے تنقید ہوسکتی ہے، مگر اس میں مذہبی تفریق اور تبلیغ کا کوئی پہلو موجود نہیں۔ ایسا کرنا غلط ہوگی۔ اللہ محمد رضوان پر رحم کرے، لگتا تو یہی ہے کہ ہمارے لبرل کیمپ اور انگریزی میڈیا کے تیروں کا ہدف وہ بننے جا رہے ہیں۔

Comments are closed.