افسران کی ترقیوں اور تبادلوں میں انکی بیگمات کا کردار

لاہور (ویب ڈیسک) نامور کالم نگار طیبہ ضیاء اپنے ایک کالم میں لکھتی ہیں ۔۔۔۔۔۔۔مفرور سیاستدانوں کی موجیں ہوتی ہیں، عمران خان کی اگلی حکومت بھی آ جائے تو ڈار نے لندن ہی زندگی گزارنی ہے، ساری دولت بیرون ممالک، اور بچوں کے نام پر ہے، دس سال بعد زندہ نہ بھی رہے

تو نقصان کوئی نہیں، جب کوئی اور حکومت آئے گی انْ کی اولادیں اس حکومت میں سینیٹر اور وزیر بن لگ جائیں گی یہ ملک کے خزانے کو جس بے دردی سے لوٹ رہے ہیں اس کی نظیر دنیا میں نہیں ملتی ۔کوئی ادارہ مالی بد عنوانی سے پاک نہیں۔شوہروں کے تبادلوں اور ترقیوں میں الا ما شاء اللہ افسران کی بیگمات بھی اہم کردار ادا کرتی ہیں اور بیگمات کی کمزوری بیش بہا تحائف اور اولادوں کی بے جا خواہشات کی تکمیل ہے۔پاکستان کی نام نہاد ایلیٹ کلاس کا لائف سٹائل قابل رحم ہے۔ مے نوشی عام ہے۔اکثر کی خواتین بھی کئی لتوں میں مبتلا ہیں ۔اولادیں گمراہی کا شکار ہیں۔پاکستان میں جتنی تنخواہ ایک اعلیٰ افسر یا وزیر کی ہے ،اس میں بمشکل اس کی بیگم کے دو جوڑے آتے ہیں۔ یہ نام نہاد اسلامی مشرقی معاشرہ نہ جانے کہاں جا رہاہے اور اس کا اینڈ کہاںہو گا۔

Sharing is caring!

One response to “افسران کی ترقیوں اور تبادلوں میں انکی بیگمات کا کردار”

  1. Adnan Haider says:

    خدا اس ملک پر رحم کرے 😢