افغانستان سے مثبت اشارے ملنے کے بعد ترجمان پاک فوج کا اہم بیان سامنے آگیا

راولپنڈی (ویب ڈیسک)پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل بابر افتخار نے کہا ہے کہ ہمارے پاس تالبان کی نیت پر شک کرنے کی کوئی وجہ نہیں، پاکستان سلامتی یقینی بنانے کیلئے تالبان کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہے،تالبان نے کئی مواقع پر دہرایاہے کہ پاکستان کے خلاف افغان سرزمین استعمال نہیں کرنے دی جائے گی،

جس طریقے سے بھارتی میڈیا نے تالبان کے پنجشیر پر اٹیک کے حوالے سے خود کو پیش کیا ہے وہ اس بات کا ثبوت ہے کہ ان کا میڈیا جعلی خبروں اور جھوٹی گھڑی گئی کہانیوں پر پروان چڑھتا ہے۔ پیر کو ایک انٹرویو میں ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھاکہ پاکستان سلامتی یقینی بنانے کیلئے طالبان کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہے۔انہوں نے کہا کہتالبان سے مسلسل رابطے میں ہیں تاکہ اپنے قومی مفاد کا تحفظ کرسکیں۔ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ تالبان نے کئی مواقع پر دہرایاہے کہ پاکستان کے خلاف افغان سرزمین استعمال نہیں کرنے دی جائے گی اور ہمارے پاس ان کی نیت پر شک کرنے کی کوئی وجہ نہیں ہے۔میجر جنرل بابر افتخار کا کہنا تھاکہ بارڈر منیجمنٹ میں مسلسل بہتری لائی جا رہی ہے اور مستقبل قریب میں بارڈر کو مکمل محفوظ بنا دیا جائے گا۔ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق پاکستان نے بارڈر کے 90 فیصد حصے پر باڑ لگانے کا کام مکمل کر لیا ہے۔ میجر جنرل بابر افتخار کا کہنا تھا کہ بارڈر مینجمنٹ میں مسلسل بہتری لائی جا رہی ہے اور ہم پر امید ہیں کہ مستقبل قریب میں اس کو مکمل طور پر محفوظ بنا دیا جائے گا۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی)میجر جنرل بابر افتخار نے ہمارا ہمیشہ سے مقصد سرحد کے اس طرف والے حصے پر بہتر مینجمنٹ رہا ہے۔ پاکستان افغان سرحد پر باڑ لگانا اس خطے کی ہیئت اور دوسری مشکلات کی وجہ سے ایک بڑی ذمہ داری تھی۔

Comments are closed.