اقتدار کے ایوانوں میں ڈاکٹر عبدالقدیر خان کے لیے دعائے مغفرت ،

لاہور (ویب ڈیسک) وزیراعظم عمران خان عشرہ رحمت للعالمینﷺ کی تقریب سے خطاب کے دوران اپنے روحانی سفر کا ذکر کرتے ہوئے جذباتی ہوگئے۔اسلام آباد میں تقریب سے خطاب میں عمران خان نے کہا کہ جیسا آج ہوں، ویسا پہلے نہیں تھا، اللّٰہ کی طرف کیسے راغب ہوا، نوجوانوں کو بتانا چاہتا ہوں۔

وزیراعظم نے کہا کہ انہوں نے بڑی سوچ بچار کے بعد اپنی اہلیہ بشریٰ کے مشورے پر اس موضوع پر بات کرنے کا فیصلہ کیا۔نوجوانوں کے نام خصوصی پیغام میں عمران خان نے کہا کہ نوجوان نسل آج بہت دباؤ کا شکار ہے، انہیں نوجوانوں سے متعلق خوف لاحق ہے، انہوں نے خود بہت تاخیر سے سیرت نبیؐ کا مطالعہ کیا۔وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ زمانہ طالب علمی میں ان کے رول ماڈلز فلم ایکٹرز اور پاپ اسٹارز تھے، انہوں نے اکثر کو تباہی کی طرف جاتے دیکھا۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ انہوں نے اسکول میں مغربی طرزِ تعلیم اور گھر کی تربیت میں تضاد دیکھا، سیدھے راستے اور رول ماڈلز کی زندگی دونوں میں زمین آسمان کا فرق پایا، جس نے انہیں سوالات کرنے پر مجبور کیا۔دوسری جانب وزیراعظم عمران خان نے تقریب کے دوران فخر پاکستان ڈاکٹر عبدالقدیر خان کے لیے مغفرت کی دعا کروائی۔اسلام آباد میں عشرہ رحمت للعالمین صلی اللّٰہ علیہ وسلم کی مناسبت سے مرکزی تقریب کا اہتمام کیا گیا۔تقریب میں وزیراعظم عمران خان اور وفاقی وزراء شریک ہوئے، جہاں مقررین نے نوجوانوں کو خصوصی پیغام دیا۔وزیراعظم نے تقریب کے آغاز میں ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی مغفرت کے لیے دعا بھی کروائی۔