امریکہ کو پوری دنیا میں تنہا کرکے رکھ دیا گیا

نیویارک(ویب ڈیسک) سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکی نشریاتی ادارے فاکس نیوز کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے بغیر کسی منصوبہ بندی کے افغانستان سے فوجوں کے انخلاء پر صدر بائیڈن کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ چین اب بگرام ایئرپورٹ پر قبضہ کر لے گا کیونکہ بائیڈن انتظامیہ نے

جان بوجھ کر تالبان کے آگے بھونڈے انداز میں سرنڈر کر کے چین کو آگے بڑھنے کا سنہری موقع فراہم کیا صدر بائیڈن افغانستان ایشو صحیح طریقے سے ہینڈل نہیں کر سکے ان میں اتنی صلاحیت نہیں کہ وہ بحرانوں کا مقابلہ کرنے کے لیے ٹھوس اور پائیدار اقدامات کر سکیں۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ تالبان کے ساتھ بات چیت کے دروازے بند کر کے صدر بائیڈن اچھا نہیں کر رہے، میں جب صدر تھا تو 25 ہزار فوجیوں کو دانشمندی سے وہاں سے نکالا ہم تالبان کے ساتھ مذاکرات کر کے اس خطے میں اپنا کردار ادا کرتے رہے لیکن صدر بائیڈن کے غیر دانشمندانہ فیصلوں نے امریکی ساکھ کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ہے، القاعدہ کے ہزاروں خطرناک قیدیوں کو جس طرح رہا کیا گیا مستقبل میں اس کے خطرناک نتائج برآمد ہونگے صدر بائیڈن امریکی سلامتی کے لیے بڑا رسک بنتے جا رہے ہیں امریکہ دنیا میں تنہائی کی طرف بڑھ رہا ہے تالبان کے ساتھ بات چیت کے دروازے بند نہیں کرنے چائیں ان سے مذاکرات کر کے حالات کو بہتر بنایا جا سکتا ہے۔

Comments are closed.