اپوزیشن تحریک میں اب تک کی سب سے بڑی دراڑ

لاہور(ویب ڈیسک )پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو کے بی بی سی کو دیئے گئے انٹرویو پرنواز شریف ، مریم نواز اور اہم لیگی رہنما سخت نالاں ہیں ، لیگی قیادت نے شکوہ کیا ہے کہ بلاول نے یہ انٹر ویو کس کے کہنے پر دیا ،مصدقہ ذرائع کا کہنا ہے کہ اس حوالے سے

نواز شریف کی طرف سے آصف زرداری کو گلہ پہنچایا گیا ہے جبکہ فضل الرحمٰن اور اختر مینگل کو فون کر کے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی پھر اپنی پرانی روش پر آگئی ہے ، فضل الرحمن اور اختر مینگل نے نواز شریف کو یہ یقین دہانی کر ائی ہے کہ ہم کوشش کریں گے کہ بلاول آپکے بیانیہ کو سپورٹ کرے اور انٹر ویو کے حوالے سے وضاحت کرے ، فضل الرحمٰن نے یہ بھی کہا ہے کہ (ن) لیگ کی طرف سے کسی قسم کا ری ایکشن نہیں آنا چایئے ،(ن) لیگ جواب دینے کے بجائے خاموشی اختیار کرے ،میں اس معاملے کو خود دیکھتا ہوں اور پی ڈی ایم کے اجلاس میں آپکے بیانیہ کو ایجنڈے میں شامل کرتے ہیں،مولانا اور دیگر افراد نے اس حوالے سے بلاول تک یہ پیغام پہنچایاہے کہ وہ خود اس انٹرویو میں نواز شریف کے حوالے سے کہے گئے الفاظ کی وضاحت کر یں تا کہ ماحول کو بہتر کریں ، ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ بلاول اورانکے قریبی ساتھی کسی صورت میں بھی نہیں چاہتے کہ انٹرویو سے انحراف یا اس حوالے سے کوئی بیان جاری کیا جائے ، بلاول کی گلگت بلتستان میں مریم کے ساتھ میٹنگ کی کوشش کی جا رہی ہے مگر وہاں کے دونوں جماعتوں کے امیدوار بڑی رکاوٹ بن گئے ہیں اور انہوں نے واضح کہہ دیا ہے کیونکہ اکثر حلقوں میں پیپلز پارٹی اور( ن) کے امیدوار آمنے سامنے ہیں ، اگر یہاں میٹنگ ہوتی ہے تو اس سے ہمارے ووٹر ز نالاں ہونگے اور ہم الیکشن ہار جائیں گے ۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *