اپوزیشن کے گوجرانوالہ جلسے کو ناکام بنانے کے لیے کیا حتمی فیصلہ ہو گیا ؟

لاہور(ویب ڈیسک) حکومت نے پی ڈی ایم کے جلسوں کے حوالے سے اپنا کام شروع کر دیا ہے۔حکومت کیخلاف حزب اختلاف کی جماعتوں کے اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم) کے16 اکتوبر ہونے والے جلسے سے قبل داخلی و خارجی راستے بند کرنے کے لیے کنٹینرز منگوا لیے گئے ہیں. ذرائع کے مطابق جلسہ سے قبل رائیونڈ انتظامیہ

نے جاتی امرا روڈ کے گرد کنٹینرز کی پکڑ دھکڑ شروع کر دی ہے‘کنٹینر ڈرائیورز نے الزام لگایا ہے کہ ان کی گاڑیوں کو پولیس نے پکڑ کر جاتی امرا روڈ پر کھڑا کر رکھا ہے.اطلاعات کے مطابق پکڑے گئے کنٹینرز رائیونڈ تھانہ کی چوکی کے باہر کھڑا کیے گئے ہیں ،رابطہ کرنے پر اے ایس پی رائیونڈ نے کنٹینروں کی پکڑ دھکڑ پر موقف دینے سے انکار کر دیا ہے.خیال رہے کہ اپوزیشن کی جانب سے پہلا جلسہ16 اکتوبر کو گوجرانوالہ میں کرنے کی تیاریاں کی جا رہی ہیں حزب اختلاف کا کہنا ہے کہ پہلا جلسہ پی ڈی ایم کی تحریک کے رخ کا تعین کرے گا.نون لیگی راہنمائوں کا کہنا ہے کہ بینرز اتارنے اور پکڑ دھکڑ کرنے کا کوئی فائدہ نہیں ہے کیونکہ حکومت مخالف جلسے اور قافلے نہیں رکیں گے پی ڈی ایم کے جلسے کو حکومت کیخلاف ریفرنڈم بھی قرار دیا جا رہا ہے. اپوزیشن کی جانب سے گوجرانوالہ کی ضلعی انتظامیہ جلسے کی اجازت دینے کے لیے آج رات تک کی ڈیڈ لائن دی گئی ہے پاکستان مسلم لیگ ( نور گوجرانوالہ انتظامیہ کے درمیان پی ڈی ایم جلسے سے متعلق ہونےوالے مذاکرات کا پہلا دور ناکام ہو چکا ہے.نون لیگی راہنما رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ اگر ضلعی انتظامیہ ہمیں اجازت نہیں دیتی ہے تو پھر جلسہ جی ٹی روڈ پر ہوگا گزشتہ روز مقامی ضلعی انتظامیہ نے پی ڈی ایم کو جناح اسٹیڈیم میں جلسہ کرنے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا تھا انکار کے بعد نون لیگی راہنماﺅں نے اعلان کیا تھا کہ پی ڈی ایم کا جلسہ جی ٹی روڈ پر ہوگا. قبل ازیں مسلم لیگ نون پنجاب کے صدر رانا ثناءاللہ نے کہا تھا کہ ہم جلسوں کے بعد ریلیوں کی طرف جائیں گے اور جب پی ڈی ایم کی قیادت مناسب سمجھے کی استعفے بھی دیں گے ان کا کہنا تھا کہ 16اکتوبرکو نا اہل حکومت کے خلاف ریفرینڈم ہوگا لیکن اس سے پہلے ہی سیاسی کارکنوں کو انتقام کا نشانہ بنایا جارہا ہے.ان کا کہنا تھا کہ جب قیادت کو صحیح لگے گا تو استعفے بھی دیئے جائیں گے پی ڈی ایم کے جلسے سے مولانا فضل الرحمان ،مریم نواز اور بلاول بھٹو خطاب کریں گےحکومت نے کریک ڈاﺅن کیا تو ہمارا بیانیہ سچ ثابت ہوگا ان کا کہنا تھا کہ ایک وزیر نے اپوزیشن جماعتوں کوتجویز دی کہ آئندہ سال تک جلسوں کو موخر کردیں.

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *