اگر معاملات شہباز شریف جیسے آدمی کے ہاتھ میں آجائیں تو بہتری کی توقع کی جاسکتی ہے ۔۔۔۔۔

کراچی (ویب ڈیسک)نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں میزبان علینہ فاروق شیخ کے سوال پہلے سوال کیا شہباز شریف کے عشایئے سے ن لیگ اور پیپلز پارٹی میں دوریاں ختم ہوں گی؟ کا جواب دیتے ہوئے تجزیہ کاروں نے کہا کہ شہباز شریف کی مفاہمت کی سوچ کسی فرد واحد کی نہیں

بلکہ ملک کی ضرورت منیب فاروق نے کہا کہ چوہدری نثار سمجھتے تھے انہیں 2018ء میں قومی اسمبلی کی ایک نشست پر باقاعدہ ہروایا گیا، چوہدری نثار کا خیال تھا کہ اگر وہ رکن پنجاب اسمبلی کا حلف اٹھاتے ہیں تو یہ انتخابی نتائج کی توثیق کرنا ہوگا، پیپلز پارٹی اور ن لیگ میں بہت فاصلے پیدا ہوگئے ہیں دونوں جماعتوں نے ایک دوسرے پر ڈیل کرنے کے الزامات لگائے، ابھی دیکھنا ہوگا نواز شریف کی پالیسی چلے گی یا شہباز شریف کی پالیسی چلے گی اسی لئے بلاول زرداری شہباز شریف کے عشایئے میں شریک نہیں ہورہے۔ حسن نثار کا کہنا تھا کہ سیاسی جماعتوں کی دوریاں اور نزدیکیاں سیاست کا حصہ ہوتی ہیں، شہباز شریف جیسے متوازن شخص کے ہاتھ میں معاملات ہوں توبہتر نتائج کی توقع کی جاسکتی ہے، شہباز شریف کی مفاہمت کی سوچ کسی فرد واحد کی نہیں بلکہ ملک کی ضرورت ہے۔ رسول بخش رئیس نے کہا کہ شہباز شریف ٹھنڈے مزاج کے شخص ہیں سب کے مل جل کر ساتھ چلنے کی راہ ہموار کرتے ہیں، حکومت اور اپوزیشن جماعتیں مل جل کر چلتی ہیں تو پاکستان کیلئے خوش آئندہوگا، چوہدری نثار اگر سوچتے ہیں کہ 2018ء میں مبینہ دھاندلی کے ذریعہ انہیں قومی اسمبلی کی نشست پر ہرایا گیا اس لئے وہ صوبائی اسمبلی کا حلف نہیں اٹھائیں گے تو یہ عذر ٹھیک نہیں ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *