ایس پی سی آئی اے عاصم افتخار کی رخصتی کی اطلاعات

لاہور(ویب ڈیسک) سانحہ موٹروے کا ملزم اگرچہ پکڑا گیا ہے مگر اس کیس کی وجہ سے پولیس کے محکمے میں بد نظمی بڑھتی جا رہی ۔ سی سی پی او لاہور عمر شیخ سے جھگڑے کے بعد ایس پی سی آئی اے عاصم افتخار نے عہدے کا چارج چھوڑ دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق گذشتہ

روز سی سی پی او عمر شیخ نے ایس پی سی آئی اے عاصم افتخار سے جھگڑے پر ان کی گرفتاری کا حکم دیا تھا۔بتایا گیا کہ سی سی پی او عمر شیخ کا قہر چھوٹے ملازمین کے بعد اب ایس پیز پر بھی نازل ہونا شروع ہو گیا۔عابد ملہی کیس میں اعتماد میں نہ لینے پر سی سی پی او کی ایس پی سی آئی اے سے تلخ کلامی ہوئی۔ سی سی پی اونے ایس پی سی آئی اے کو فوری سیف سٹی کے دفتر طلب کیا تھا۔ لیٹ ہونے پر ایس پی سی آئی اے کی گرفتاری کے احکامات دے دیئے۔گرفتاری کے احکامات پر ایس پی عاصم افتخار نے انتہائی رد عمل دیا اور میٹنگ چھوڑ کر چلے گئے۔سی سی پی او عمر شیخ نے عاصم افتخار سے تمام مراعات واپس لینے کے احکامات دیئے۔سی سی پی او نے ایس پی سول لائنز کو بلا کر مقدمہ کے اندراج کے لیے استغاثہ لکھ دیا تاہم افسران کی مداخلت پر استغاثہ پر تاحال کوئی کاروائی نہ کی گئی، ایس پی سی آئی اے کو عہدے سے ہٹانے کا فیصلہ بھی کر لیا گیا۔تاہم اب دونوں افسران کے مابین ہونے والے جھگڑے کے بعد اہم پیش رفت دیکھنے میں آئی ہے بتایا گیا ہے کہ سی سی پی او لاہور عمر شیخ سے جھگڑے کے بعد ایس پی سی آئی اے عاصم افتخار نے عہدے کا چارج چھوڑ دیا ہے۔عاصم افتخار کو ایس پی ٹریفک ہیڈ کوارٹر یا پھر ایس پی سپیشل برانچ تعینات کرنے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔ ۔اس سے قبل 3 پولیس افسران کی سی سی پی او لاہور کے خلاف درخواست دینے کا انکشاف ہوا تھا۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *