این اے 75 ڈسکہ ضمنی الیکشن کا نتیجہ روکے جانے پر غریدہ فاروقی نے حیران کن بات کہہ ڈالی

لاہور (ویب ڈیسک) الیکشن کمیشن آف پاکستان نے این اے 75 کے ضمنی انتخاب کا نتیجہ روک دیا ہے اور نتائج میں ردو بدل کا خدشہ ظاہر کردیا ہے ، ایسے میں سینئر صحافی اور اینکر پرسن غریدہ فاروقی بھی خاموش نہ رہ سکیں اور کہا کہ 2018میں دھاندلی کی انوکھی تاریخ رقم ہوئی تھی تو2021نے اسے

بھی پیچھے چھوڑ دیا۔ٹوئٹر پر انہوں نے لکھا کہ ” الیکشم کمیشن آف پاکستان کی انتظامیہ اورقانون نافذ کرنیوالےاداروں کیخلاف کُھلی چارج شیٹ, 2018 ء میں دھاندلی کی انوکھی تاریخ رقم ہوئی تھی تو 2021ءنے اسے بھی پیچھے چھوڑ دیا؛ افسوسناک بات کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کےشفافیت کے نعرےتلےیہ سب ہورہا۔ان 20 پولنگ سٹیشنز پر دوبارہ الیکشن ہی واحد حل ہے”۔ادھر الیکشن کمیشن نے بتایا کہ این اے 75 کے غیر ضروری تاخیر کے ساتھ نتائج موصول ہوئے ، متعدد بار پریزائڈنگ افسران سے رابطے کی کوشش کی گئی لیکن ناکام رہے ،آر او کی اطلاع پر چیف لیکشن کمشنر نے آئی جی اور ڈپٹی کمشنر سے رابطہ کی کوشش کی لیکن کوئی جواب نہ ملا ، چیف سیکریٹری سے رات تین بجے رابطہ ہوااور چھ بجے پریزئڈنگ افسرا بمعہ پولنگ بیگ حاضر ہو گئے ،جس کی وجہ سے آر او اور ڈی آر او کو شبہ ہوا کہ بیس پولنگ سٹیشن کے نتائج میں رد و بدل ہواہے جس کے باعث نتائج کو روک دیا گیاہے ۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *