ایک زبردست تبصرہ ملاحظہ کریں

لاہور (ویب ڈیسک) علامہ خادم حسین رضوی کی نماز جنازہ ادا کر دی گئی۔ نماز جنازہ میں عقیدت مندوں کی لاکھوں کی تعداد میں شرکت نے اندرون و بیرون ملک تمام قوتوں کی آنکھیں کھول دی ہیں۔ پردے کے پیچھے  وہ تمام طاقتیں جو ختم نبوت کے قانون میں تبدیلی کی خواہاں ہیں

نامور کالم نگار محمد اکرم چوہدری اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ان سب کو مسلمانانِ پاکستان نے نبی کریم حضرت محمد صلی اللّہ علیہ وآلہ وسلّم کی ختم نبوت کے تحفظ پر فیصلہ سنا دیا ہے۔ یہ جنازہ ختم نبوت کے قانون میں تبدیلی کے خواہاں افراد کے لیے ریفرنڈم ثابت ہوا ہے۔ لاکھوں افراد کی علامہ خادم رضوی سے تعلق صرف ا ور صرف ختم نبوت کے قانون سے محبت ہے۔ علامہ خادم حسین رضوی کی وجہ شہرت ختم نبوت کے قانون پر واضح اور دو ٹوک موقف تھا انہوں نے گذشتہ چند برسوں میں اس قانون کے حوالے سے واضح موقف اختیار کیا اور زندگی کے آخری سانس تک اپنے موقف پر سختی سے قائم رہے۔ علامہ خادم حسین رضوی کی نماز جنازہ میں شریک افراد لبیک لبیک لبیک یا رسول اللہ لبیک لبیک لبیک یا رسول کے فلگ شگاف نعرے گونجتے رہے۔ یہی نعرہ علامہ خادم حسین رضوی کی پہچان تھا یہی نعرہ پاکستان بھر سے عاشقانِ رسول اللہ صلی اللّہ علیہ وآلہ وسلّم کو مینار پاکستان کھینچ لایا۔ ان کی نماز جنازہ مینار پاکستان میں ادا کی گئی لیکن پورا لاہور جناز گاہ کا منظر پیش کر رہا تھا اس نسل نے اس سے پہلے کبھی یہ نظارہ نہیں دیکھا ہو گا کہ کسی کے جنازے میں اتنی عقیدت کا مظاہرہ کیا گیا ہو۔ درحقیقت یہ محبت لبیک لبیک لبیک یا رسول اللہ کے نعرے سے ہے اور علامہ خادم رضوی نے اس نعرے کے مقصد کو اپنی زندگی کا مقصد بنایا اور بلا خوف و خطر اس نعرے کے مقصد کے ساتھ جڑے رہے۔ علامہ خادم حسین رضوی کی نماز جنازہ میں لاکھوں افراد کی شرکت نے یہ ثابت کیا ہے کہ مسلمانانِ پاکستان کسی بھی صورت ختم نبوت کے قانون میں معمولی سی تبدیلی بھی برداشت نہیں کریں گے۔ وہ ہر ایسی حرکت کی مخالفت کریں گے۔ جو کوئی بھی اس قانون کو بدلنا چاہتا ہے وہ ان لاکھوں افراد کی مخالفت کے لیے تیار رہے، وہ جو مینار پاکستان پہنچے یا انہوں نے جو اپنے گھروں سے عقیدت کا اظہار کرتے رہے۔ علامہ خادم حسین رضوی اور ان کے ساتھیوں نے ختم نبوت کے قانون کی حفاظت کے لیے جو راستہ اختیار کیا ہے اس نے آنے والی نسلوں کے لیے ایک نئی سمت کا تعین کیا ہے۔ تحریک لبیک پاکستان کے اکابرین نے اس ملک میں بسنے والے مسلمانوں کو نبی کریم صلی اللّہ علیہ وآلہ وسلّم کی ختم نبوت سے محبت کا درس دیا ہے۔ ہمیں یہ سبق اپنے بچوں کو پڑھانا ہے۔ ہمیں اس قانون کا پہریدار بننا ہے۔ 

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *