بابا جان کی شادی خانہ آبادی

لاہور (ویب ڈیسک) بڑی مشکلات کا سامنے کرنے والے 42 سالہ بابا جان کی شادی ہو گئی ۔ حال ہی میں زندگی کے 9 قیمتی سال قید میں گزار کر باہر آنے والے بابا جان کی شادی کی تقریبات 4 دن بلاناغہ جاری رہیں ، جن میں انکے دوستوں ، رشتہ داروں اور شہر کے لوگوں سمیت پاکستان

بھر سے انکے چاہنے والوں نے شرکت کی ۔ عوامی ورکرز پارٹی گلگت بلتستان کے چیئرمین 42 سالہ باباجان کی شادی میں شرکت کرنے والوں میں رکن قومی اسمبلی محسن داوڑ اور جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین توقیر گیلانی سمیت متعدد اہم شخصیات بھی شامل ہیں۔یہ اس لحاظ سے بھی منفرد اور پہلی شادی تھی کہ جس میں ہر خاص و عام شرکت کی دعوت دی گئی تھی اور شادی پر ہونے والے تمام کے تمام اخراجات عوامی ورکرز پارٹی کے ان کارکنوں نے مشترکہ طور پر اٹھائے جنہوں نے باباجان کی قید کے دوران ان کی رہائی کے لیے طویل جدوجہد کی۔شادی میں 24 گھنٹے لنگر جاری رہا اورتمام مہمانوں کی پرتکلف اور لذیذ کھانوں سے تواضع کی گئی، شادی میں مہمانوں کے اعزاز میں لگاتار 4 روز تک ثقافتی شو کا بھی اہتمام کیا گیا۔شادی میں میوزیشنز کے 8 مختلف گروپوں نے ایک ساتھ مقامی دھنوں کا ایسا سماں باندھا کہ خود دولہا کے علاوہ تقریب میں موجود ہر علاقے اور ہر عمر کے لوگوں نے باری باری ٹولیوں کی شکل میں خوبصورت علاقائی ناچ پیش کرکے لوگوں کو خوب محظوظ اور باباجان کی شادی کی خوشیوں کو دوبالا کیا ۔یاد رہے کہ بابا جان کی دلہن ہمت بیگم کا تعلق غذر کے علاقے گچ سے ہے۔

Comments are closed.