بریکنگ نیوز: اختر مینگل کے بعد چوہدری برادران نے عمران خان کو ناقابل یقین سرپرائز دے دیا

لاہور (ویب ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ (ق) نے بنی گالہ میں وزیرِ اعظم عمران خان کی جانب سے آج دیئے جانے والے عشائیے میں شریک نہ ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ذرائع کے مطابق مسلم لیگ ق کی قیادت نے عشائیے میں شریک نہ ہونے کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم حکومت کے اتحادی ہیں مگر

عشائیے میں شریک نہیں ہو رہے۔ترجمان ق لیگ کے مطابق وفاقی حکومت نے قیادت سے رابطہ کر کے عشائیے میں شرکت کی باضابطہ دعوت دی ہے تاہم پارٹی رہنماؤں کی مصروفیات کی بناء پر عشائیے میں شریک نہیں ہو رہے، بجٹ کی منظوری کے تمام عمل میں حکومت کو ووٹ دے رہے ہیں۔واضح رہے کہ وزیرِ اعظم عمران خان کی جانب سے حکومتی اور اتحادی ارکان کے لیے دینے جانے والے عشائیے کا مقصد بجٹ منظوری کے لیے ارکان کی ایوان میں حاضری یقینی بنانا ہے جبکہ بجٹ منظوری کے لیے حکومتی حکمتِ عملی پر بھی مشاورت ہوگی۔عشائیے میں وزیرِ اعظم عمران خان ناراض اتحادیوں کے تحفظات اور اختلافات بھی دور کریں گے۔دوسری جانب بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل بھی وزیرِ اعظم کے عشائیے میں شرکت نہ کرنے کا اعلان کر چکی ہے۔بی این پی مینگل کے سربراہ اخترمینگل کا کہنا تھا کہ عشائیہ اتحادیوں کو دیا گیا ہے اور اب ہم اتحادی نہیں رہے، جب اتحادی نہیں رہے تو عشائیے میں شرکت کیوں کریں۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وزیراعظم عمران خان آج حکومتی ارکان قومی اسمبلی کےاعزاز میں عشائیہ دیں گے، اتحادی اور حکومتی ارکان کو وزیراعظم ہاﺅس میں عشائیہ دیاجائے گا۔ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی جانب سے دیئے جانے والی عشائیے کی تقریب میں معاونین، مشیر بھی شریک ہوں گے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ عشائیے کی تقریب میں وفاقی بجٹ منظور کرانے کی حکمت عملی پر غور ہوگا اور ساتھ ہی تقریب میں پارٹی کے اندرونی اختلافات، اتحادیوں کے معاملات اور قومی ایشوز پر بات ہوگی۔ذرائع کے مطابق پیٹرول کی قیمتوں میں اضافہ سے متعلق حقائق قوم کے سامنے رکھے جانے پر مشاورت ہوگی، وزیراعظم عمران خان حکومتی ارکان قومی اسمبلی سے خطاب بھی کریں گے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.