بڑا حکم جاری

کراچی (ویب ڈیسک) اسلام آباد ہائیکورٹ کی جانب سے جاری کیے گئے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ آج کچھ وکلاء نے اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس بلاک پر اٹیک کیا۔اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ چیف جسٹس بلاک پر اٹیک اور توڑ پھوڑ کرنے والے وکلاء کیخلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے

جس میں 4 خواتین سمیت 34 وکلاء کو نامزد کیا گیا ہے۔ اعلامیے کے مطابق ایف آئی آر میں نامزد وکلاء کی گرفتاری کیلئے پولیس ریڈ کر رہی ہے جبکہ وکلاء کیخلاف الگ سے توہین عدالت کی کارروائی بھی شروع کی جا رہی ہے۔ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ اٹیک میں ملوث وکلاء کے لائسنس معطلی کیلئے اسلام آباد بار کونسل کو ریفرنس ارسال کیا جا رہا ہے۔ اسلام آباد ہائیکورٹ پردھاوے کا مقدمہ تھانہ رمنا میں وکلاء کے خلاف درج کیا گیا جس میں چیف جسٹس بلاک میں توڑ پھوڑ پر 34 وکلاء کو نامزد کیا گیا۔ مقدمہ حفاظتی انتظامات کے انچارج اسلام آباد ہائیکورٹ محمد حیات کی مدعیت میں درج کیا گیا جس میں وکلاء کے خلاف کئی سنگین دفعات شامل ہیں۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *