بھٹی صاحب : جو کپتان چپل میں پہنتا ہوں اسکی خاص بات یہ ہے کہ ۔۔۔۔۔۔

لاہور (ویب ڈیسک) نامور کالم نگار ارشاد بھٹی اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔ سب سے بڑا دکھ یہ،گزرے سواتین سالوں سے پنجاب مطلب آدھے پاکستان کا حکمران سائیں عثمان بزدار ،جو شاکر شجاع آبادی کی طرح خود بھی جنوبی پنجاب کے، جن کو بقول عمران خان وزارت اعلیٰ اسلئے ملی کہ

ان کا تعلق جنوبی پنجاب کے ایک پسماندہ علاقے سے، خود اتنے پسماندہ کہ اپنے گھر میں بجلی نہیں اور جنوبی پنجاب کی پسماندگی دورکرنے کی شدید خواہش انکے دل میں، اس سائیں عثمان بزدار کی سوا تین سالوں میں شاکر شجاع آبادی پر نظر نہ پڑی۔انکے بچوں کو نوکری،کوئی سرکاری وظیفہ ،کوئی علاج ،سائیں بزدار نے جنوبی پنجاب کی پسماندگی دورکیا کرنی تھی وہ تو ایک شاکر شجاع آبادی کی پسماندگی دور نہ کرپائے، ہاں یہ سنا جارہا کہ سائیں بزدار نے اپنی کیا اپنی سات نسلوں کی ’پسماندگی ‘ دور کرلی۔سائیں کے اب 4شہروں میں گھر، ایک لاؤ لشکر پروٹوکول کے نام پر ساتھ، سائیں آئے روز یوں سرکاری ہیلی کاپٹر بھگائیں کہ اگر 5سالہ مدت پوری کرگئے تو شہباز شریف کے ہیلی کاپٹر بھگانے کا ریکارڈ ٹوٹ جائے گا، سائیں کی گورننس، پرفارمنس یا پنجاب کے ہر محکمے میں بدعنوانی کے الزامات ایک طرف رکھیں۔سواتین سالہ وزارت اعلیٰ میں سائیں بزدار سوئمنگ سیکھ گئے، گورنر ہاؤس میں روزانہ واک، اپنے کھانے پینے کامکمل خیال ،جوتے ،کپڑے پہننے کا ایسا ڈھنگ آگیا کہ ایک بار پنجاب ہاؤس اسلام آباد میں ملے،پوچھنے پر بتانے لگے کہ یہ کپتان چپل جو میں نے پہنی ہوئی، اسکا چمڑا عام نہیں یہ بہت خاص چمڑا ،یہ پاؤں کو comfortable رکھے۔یہ بھی سائیں نے بتایا کہ جب وہ اسلام آباد آئیں تو نارمل چائے نہیں پیتے، بلکہ ان کیلئے خاص قسم کی چائےبنائی جائے، جوان کا خاص بندہ کہیں اور سے بنا کر لائے، اب یہ یاد نہیں کہ سائیں نے چائے مطلب دودھ پتی میں ڈالا جانے والا دودھ بکری کا بتایا تھا یا بھینس کا،اس کے علاوہ سائیں خود کو فٹ رکھنے کیلئے کیا کیا کریں۔یہ پھر کبھی سہی، یہ موضوع نہیں،موضوع شاکر شجاع آبادی ،سائیں کا ذکر اسلئےآگیا کہ بتانا صرف یہ ، سواتین سالوں میں سائیں بزدار کی سات نسلوں کی تو حالت بدل گئی مگر شاکر شجاع آبادی کی 66 سالوں میں حالت خراب سے خراب تر ہوئی، مگر وہی بات کس کس بات پر روئیں دھوئیں۔کس کس چیز کا ماتم کریں، کون سا شعبہ، کونسا ادارہ جو زوال سے بچ گیا ہو،آج ہر شعبے کے شاکر شجاع آبادیوں کا یہی حال جو شاکر شجاع آبادی کا اور آج ہر شعبے میں سائیں بزدار ایسے ہی موجیں کررہے جیسے سائیں عثمان بزدار کررہے۔

Comments are closed.