تحریک انصاف کے نامور رہنما اور وزیر نے استعفیٰ دے دیا

پشاور (ویب ڈٰسک) تازہ ترین اطلاعات کے مطابق ۔۔۔۔کچھ سابق اور موجودہ اراکینِ خیبرپختونخوا اسمبلی کی مبینہ طور پر پیسے وصول کرنے کی ویڈیو منظرِ عام پر آنے کے بعد خیبرپختونخوا کے موجودہ وزیرِ قانون سلطان محمد خان نے استعفیٰ دے دیا ہے۔ اس سے قبل ویڈیو کے منظرِ عام پر آنے کے بعد

وزیرِاعظم عمران خان نے سلطان محمد خان سے استعفیٰ لینے کے فیصلے کا اعلان کیا تھا۔دریں اثنا اس وڈیو میں نظر آنے والے ایک رکن نے دعویٰ کیا ہے کہ انھیں پیسے پی ٹی آئی کے وزیر اعلیٰ اور سپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی کے حکم پر اور سپیکر کے کمرے دیے گئے تھے۔ انھوں نے کہا کہ یہ رقم انھوں نے مانگی نہیں تھی بلکہ انھیں خود دی گئی تھی۔ جن اراکین اسمبلی کو اس ویڈیو میں دکھایا گیا ہے انھوں نے کہا کہ یہ دو الگ الگ ویڈیوز ہیں جنھیں جوڑا گیا ہے اور ایسا تاثر دکھایا گیا ہے جیسے یہ ایک ہی ویڈیو ہو۔سلطان محمد خان نے استعفی دیتے ہوئے اپنے آپ کو کسی بھی قسم کی انکوائری کے لیے پیش کیا اور کہا کہ انھیں یقین ہے کہ ان پر لگے تمام الزامات جھوٹے ثابت ہوں گے۔منظرِعام پر آنے والی اس ویڈیو میں خیبرپختونخوا اسمبلی کے متعدد سابق اور موجودہ اراکین کے سامنے نوٹوں کے انبار لگے دیکھے جا سکتے ہیں تاہم تاحال اس بات کی تصدیق نہیں ہو سکی کہ یہ ویڈیوز کس وقت بنائی گئی تھیں۔وزیرِ اعظم کے معاونِ خصوصی برائے سیاسی ابلاغ شہباز گل نے خیبرپختونخوا کے وزیرِ قانون سے استعفیٰ لینے سے متعلق اعلان اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ کے ذریعے کیا تھا۔ انھوں نے بتایا کہ وزیراعظم نے اس حوالے سے وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کو احکامات دے دیے ہیں اور جلد معاملے کی انکوائری کر کے رپورٹ پیش کی جائے گی۔ادھر وزیرِ اعظم عمران خان کی جانب سے اس حوالے سے تین ٹویٹس سامنے آئی ہیں جس میں انھوں نے سینیٹ انتخابات میں مبینہ خرید وفروخت سے متعلق پاکستان کے سیاسی نظام کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔انھوں نے دعویٰ کیا ہے کہ ’ان ویڈیوز سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ سیاست دان سینیٹ میں کس طرح سے ووٹوں کی خرید و فروخت کرتے ہیں۔‘

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *