ترین گروپ عمران خان کا حامی اور عثمان بزدار کے خلاف سرگرم عمل

لاہور(ویب ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے ناراض رہنما جہانگیر ترین کا گروپ وزیر اعظم عمران خان کا حامی جبکہ وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کیخلاف ہوگیا۔جہانگیر ترین کا کہنا ہے کہ پنجاب حکومت انتقامی کارروائیاں کررہی ہے کوئی فارورڈ بلاک نہیں بنایا، پی ٹی آئی میں ہیں، ہمارے ساتھیوں پر ڈباؤ ڈالا جارہا ہے،

متحد ہو کر پنجاب حکومت کی انتقامی کارروائیوں کامقابلہ کرینگے، ادھر پی ٹی آئی میں جہانگیر ترین ہم خیال گروپ نے پنجاب کے بعد اب خیبر پختونخوا میں بھی انٹری دیدی، راجہ ریاض کا کہنا ہے کہ انہیں 5؍ ارکان کی حمایت حاصل ہوگئی۔دوسری جانب وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہاکہ جہانگیر ترین کا گروپ بجٹ میں عمران خان کو ووٹ دیگا،پارٹی میں چھوٹے موٹے اختلافات ہوتے رہتے ہیں، یہ کوئی بڑا ایشو نہیں۔وزیراعظم کے مشیر برائے پارلیمانی امور ڈاکٹر بابر اعوان کا کہنا ہے سینیٹ اور قومی اسمبلی میں واضح اکثریت موجود، پنجاب اور مرکز کا بجٹ منظور کرانے میں کوئی دقت پیش نہیں آئیگی۔ تفصیلات کے مطابق لاہور میں جوڈیشل کمپلیکس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے جہانگیر ترین نے کہا ہے کہ ہم پی ٹی آئی کا حصہ تھے، ہیں اور رہیں گے۔ عمران خان انصاف پسند آدمی ہیں، ہمیں ضرور انصاف ملے گا ۔ایف آئی اے کو مکمل منی ٹریل دیدی ہے، میرے گروپ کے ساتھ پنجاب حکومت کا رویہ نامناسب ہے، پنجاب حکومت کی انتقامی کارروائیاں بند ہونی چاہئیں۔انہوں نے کہا کہ وضاحت ضروری ہے کہ دو مسائل ہیں، پہلا مسئلہ جہانگیر اور ایف آئی اے کا، جسکے ساتھ میرے تمام دوست کھڑے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جب میرے دوست وزیر اعظم عمران خان سے ملے تو وہ خوش دلی سے ملے اور علی ظفر کو معاملے کی انکوائری کیلئے نامزد کیا،ہمیں علی ظفر کی رپورٹ کا انتظار ہے۔ جہانگیر ترین نے کہا کہ ہم متحد ہوکر انتقامی کارروائیوں کا مقابلہ کرینگے، ایف آئی اے نے جس جس معاملے پر سوال اٹھایا تھا انہیں دستاویزات حوالے کردیئے گئے تمام منی ٹریل فراہم کردی ہے ۔علی ظفر کی رپورٹ جلد منظر عام پر آجائیگی۔ جہانگیر ترین نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان نے یقین دہانی کرائی ہے کہ ہمارے ساتھ کوئی انتقامی کارروائی نہیں ہوگی اور انصاف ملے گا تو مجھے ان پر پورا یقین تھا وزیر اعظم عمران خان انصاف پسند انسان ہیں اور انصاف کے تقاضے پورا کرینگے۔

Comments are closed.