ترین گروپ پنجاب میں عمران خان کو جلد کیا سرپرائز دے سکتا ہے ؟

لاہور (ویب ڈیسک) سیاسی جماعتوں کے رہنماوں نے قراردیا ہے کہ جہانگیر ترین گروپ پنجاب میں تبدیلی کا پیش خیمہ ثابت ہوسکتا ہے جبکہ اختلافات کو دور نہ کیا گیا جمہوریت کیلئے خطرہ ہو سکتا ہے ۔ نجی میڈیا گروپ کے فورم سے گفتگو کرتے ہوئے تحریک انصاف کی رکن قومی اسمبلی

اور رہنما ڈاکٹر سیمی بخاری نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کسی بدعنوان کو نہیں چھوڑیں گے خواہ اسکے باعث اسمبلی خالی ہو جائے یا حکومت چلی جائے ۔ جس نے بھی قوم کا پیسہ لوٹا، اس کیخلاف کارروائی ہو گی اور اس پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائیگا۔ مسلم لیگ ن کے رہنما راجہ ظفر الحق نے کہا کہ جہانگیر ترین گروپ کیساتھ ابھی تک کوئی معامالات طے کئے نہ رابطہ ہوا ،کیونکہ ابھی تک یہ گروپ عمران خان کو ہی لیڈر تسلیم کرتا ہے ، ان کیساتھ اگر ن لیگ رابطہ کرتی ہے تو وفاق میں تو کوئی تبدیلی نہیں آ ئیگی،تاہم صوبائی سطح پر یہ تبدیلی کا پیش خیمہ ثابت ہو سکتے ہیں ،لیکن ابھی اس حوالے سے حالات کا جائزہ لیا جا رہا ہے ۔ مسلم لیگ (ض)کے سربراہ اعجاز الحق نے کہا کہ جہانگیر ترین گروپ پریشر گروپ ہے ، یہ حکومت پردبائو ڈال کر اپنے مفادات کو حاصل کرنا چاہتا ہے ۔ حکومت کو بھی چاہئے کہ وہ ان کیساتھ رابطہ کر کے انکے جائز تحفظات کو دور کرے اور جو بھی معاملات ہیں ان کو حل کیا جائے ۔ موجودہ اختلافات کو دور نہ کیا گیا تو یہ جمہوریت کیلئے خطرہ ثابت ہو سکتے ہیں ۔

Comments are closed.