توفیق بٹ نے ساری کہانی بیان کردی

لاہور (ویب ڈیسک) نامور کالم نگار توفیق بٹ اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔مفتی عبدالقوی  اور حریم شاہ کی گندگیوں کا ایک اور شوشا سامنے آگیا ہے جو مفتی قوی کے منہ پرحریم شاہ کے طمانچے کی صورت میں ہے، اِس طمانچے پراِک تماشا کھڑا ہوگیا ہے، سوشل میڈیا کو

اپنا ”کاروبار“ چمکانے کے لیے اِک نیا”گاہک“ مِل گیا ہے، ہمارا دین ایک دوسرے کے عیبوں پر پردے ڈالنے کا حکم یا درس دیتا ہے، پردہ پوشی اللہ کو بڑی پسند ہے، اللہ نے تو بے شمار سبزیوں اور پھلوں کے بھی پردے رکھے ہیں، سوشل میڈیا کا کام اب شاید صرف یہی رہ گیا ہے لوگوں کی خرابیوں بُرائیوں یا عیبوں سے پردے اُٹھا ئے جائیں، سوشل میڈیا کا اپنا کردار مفتی قوی اور حریم شاہ جیسا ہی ہوگیا ہے، مجھے یاد آیا چند روز پہلے میں لاہور کے ایک بڑے ہوٹل میں ایک شادی پر گیا، میں جس میز پر بیٹھا تھا وہاں میرے ساتھ پاکستان کے ایک نامی گرامی بدمعاش آکر بیٹھ گئے، دیکھتے ہی دیکھتے اُن کے ساتھ ”سیلفیاں“ بنوانے والوں کا ہجوم اُمڈآیا، اُس پر وہ ”بدمعاش محترم“ میرے کان میں یہ کہتے ہوئے اُٹھ کھڑے ہوئے کہ میں دوسری میز پر جارہا ہوں، میرے لیے یہ بات انتہائی تکلیف دہ ہے لوگ آپ جیسے دانشور وقلم کار کے بجائے میرے ساتھ سیلفیاں بنوارہے ہیں“۔….میں نے ازراہ مذاق اُن سے کہا ” آپ اِدھرہی بیٹھے رہیں، ہوسکتا ہے کچھ دیر آپ کی کمپنی میں بیٹھ کر میں بھی تھوڑا بہت بدمعاش بن جاﺅں اور میرے ساتھ بھی لوگ سیلفیاں بنوانے لگیں“…. وہ مسکرائے اور دوسری میز پر چلے گئے،…. جہاں تک حریم شاہ جی کا تعلق ہے وہ عورتوں کی مفتی قوی ہیں اور  مفتی قوی مردوں کے حریم شاہ ہیں، دونوں ایک ہی تھالی کے چٹے بٹے ہیں، معاشرے کی گندگی میں ایک ہی بار ڈھیر سارا اضافہ کرنے میں دونوں کی سیاہ کاریوں کا خصوصی عمل دخل ہے۔ دونوں بدنامی کواصل میں ”مشہوری“ سمجھتے ہیں، دونوں اپنے اپنے غلیظ مقاصد میں مسلسل کامیابیاں حاصل کررہے ہیں،….

یقین کریں میں اِس گندگی میں ہاتھ نہیں ڈالنا چاہتا تھا، مگر جیسا کہ میں نے پہلے عرض کیا مجھے یوں محسوس ہورہا تھا میں اِس گندگی میں ہاتھ نہیں ڈالوں گا لوگ کیا سوچیں گے اتنے اہم اور ”حساس موضوع“ پر میں نے کچھ لکھا ہی نہیں؟….میرے خیال میں یہ دوگندی سوچوں کا ایک مشترکہ ویڈیو کلپ تھا، اصل میں مفتی قوی اور حریم شاہ دونوں کافی عرصے سے منظر سے غائب تھے، ہوسکتا ہے دونوں نے اتنے طویل عرصے تک منظر سے غائب رہنے کا نقصان اپنے تازہ ترین ویڈیو کلپ کو خود ہی سوشل میڈیا پر وائرل کرواکر پورا کرنے کی کوشش کی ہو، سوشل میڈیا کو بہرحال  مفتی اور حریم شاہ کا ممنون ہونا چاہیے جس نے چند روز کے لیے اُس کا ”کاروبار“ چمکا دیا، اِس ”کاروبار“ میں مندی آنے کی صورت میں ایک اور ”تہلکہ خیز ویڈیو کلپ“ بھی منظر عام پر آسکتا ہے ،جو ابھی تک نہیں آیا؟جس میں اہم انکشافات سامنے آئیں گے،…. اِس معاشرے میں عزت واقعی بے عزتی ہے، کچھ عرصہ پہلے ایک قلم کار نے انتہائی ناراضگی سے مجھ سے کہا ”تم نے فلاں شاعرہ کے سامنے میری بے عزتی کی ہے“…. میں نے پوچھا ” کیا بے عزتی کی ہے؟“،وہ بولے تم نے اُسے کہا ہے، کہ ”وہ بڑے شریف آدمی ہیں“،تم نے اُس کی نظروں میں مجھے گرانے کی کوشش کی ہے، وہ شریف آدمی سمجھ کر اب مجھے منہ ہی نہیں لگارہی“…. حریم شاہ نے  مفتی قوی کو تھپڑ جڑا مفتی نے جواباً کیا جڑا ؟ یہ ویڈیو کلپ بھی کسی روز شاید منظر عام پر آجائے!!

Comments are closed.