ثانیہ نشتر نے پاکستانیوں کو ٹرک کی بتی کے پیچھے لگا دیا

اسلا م آباد(ویب ڈیسک) وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے تخفیف غربت وسماجی تحفظ ڈاکٹر ثانیہ نشترنے کہاہے کہ حکومت پاکستان معاشرے کے پسماندہ افراد کی بہبود کیلئے متعدد اقدامات کر رہی ہے، پاکستان کو بھی کورونا وباء کے باعث معاشی مسائل کا بھی سامنا رہا ہے ، سب مل کر کام کریں تو

تب ہی غربت کی شرح میں مربوط کمی لائی جاسکتی ہے۔ جمعرات کو جنرل اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر پینل مباحثے میں تخفیف غربت سے متعلق فورم سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم کی معاون خصوصی ثانیہ نشترنے کہا کہ حکومت پاکستان معاشرے کے پسماندہ افراد کی بہبود کیلئے متعدد اقدامات کر رہی ہے، حکومت کی جانب سے شروع کیا جانیو الا احساس پروگرام اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے، کورونا وائرس کے بعد ہمیں صحت کے ساتھ ساتھ دیگر مسائل کا سامنا بھی رہا ہے، حکومت نے ڈیڑھ کروڑ مستحق افراد کی معالی معاونت کی ہے، پاکستان کو بھی کورونا وباء کے باعث معاشی مسائل کا بھی سامنا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ ملک میں غربت کی شرح بہت زیادہ ہے، سب مل کر کام کریں تو تب ہی غربت کی شرح میں مربوط کمی لائی جاسکتی ہے۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کی طرف سے غربت کے خاتمے کیلئے شروع کئے گئے پروگرام میں میں عالمی سطح پر پذیرائی مل رہی ہے۔معاون خصوصی ثانیہ نشتر نے جنرل اسمبلی اجلاس کے حوالے سے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی دفعہ ایسے اجلاس میں شرکت کی جس میں چھ سے زائد ممالک کے سربراہان اور 11متعلقہ وزراء نے شرکت کی۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں آمدن کے لحاظ سے غربت کی شرح 24فیصد ہے،اگر اسے(ملٹی ڈائمنشنل) کثیر الطرفہ پیرائے میں دیکھا جائے تو غربت کی شرح38 فیصد ہے،یہ شرح کورونا وائرس وباء سے پہلے کی ہے، ابھی مزید سروے کئے جارہے ہیں جلد پتہ چل جائے گا کہ ہمیں کورونا وائرس نے کس بری طرح متاثر کیا ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.