جسے اللہ رکھے اسے کون چکھے :

لاہور(ویب ڈیسک) دنیا میں عجیب و غریب واقعات رونما ہوتے رہتے ہیں ایسا ہی ایک واقعہ بنگلا دیش میں سامنے آیا ہے، پیدا ہونے کے بعد ڈاکٹرز نے بچے کو فوت شدہ قرار دے دیا مگر بچے نے عین اس وقت آنکھیں کھول دیں اور رونے لگا جب اسے قبر میں لٹایا جا رہا تھا۔

بنگلادیش کے دارالحکومت ڈھاکا میں سات ماہ کی حاملہ خاتون شاہین اختر نے قبل از وقت بچے کو جنم دیا جسے لیڈی ڈاکٹر نے فوت قرار دیتے ہوئے دستانے رکھنے والے ڈبے میں رکھ کر والد کو دیا کہ قریبی قبرستان میں دفنا آئے۔ یہ سن کر بچے کے باپ کا برا حال ہو گیا اور اس کے باقی اہل خانہ بھی رونے لگے۔غمزدہ باپ قبرستان گیا تو وہاں قبر کی قیمت زیادہ تھی جس پر اسے ایک اور قبرستان بھیجا گیا جہاں نسبتاً سستی قبر مل گئی۔ قبر کھودنے کے بعد جیسے ہی نومولد کو قبر میں اتارا جانے لگا اچانک بچے کا جسم حرکت کرنے لگا۔ چانک وہاں موجود لوگ حیران وپریشان ہو گئے ، مگر باپ خودکو سنبھالتے ہوئے تیزی کے ساتھ بچے کو لیکر دوبارہ اسی ہسپتال گیا تاہم ہسپتال والوں نے اسے طبی امدادا دینے سے انکار کر دیا اور کہا کہ جنرل وارڈ میں بستر نہ ہونے کی وجہ سے بچے کو دوسرے ہسپتال لے جانا پڑے گا۔باپ نے فوری بچے کو دوسرےہسپتال دکھایا تو ڈاکٹرز نے اس کے زندہ اور صحیح ہونے کی خوشخبری سنائی ، بعد ازاں بچے کے زندہ ہونے کی خبر اس کی ماں کو سنائی گئی جس کی حالت بہت خراب بتائی جا رہی تھی ،بچے کے بارے میں سن کر اس کی ماں کی طبیعت خطرے سے باہر بتائی جارہی ہے۔ والدین نے بچے کے زندہ ہونے پر مسرت کا اظہار کیا۔اور اس کشمے پر حیرانی کا اظہار کیا۔اور شکر بھی ادا کیا کہ ان کا بچہ صحیح سلامت ان کے درمیان موجود ہے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *