جواب میں چیکر نے دلچسپ بات کہہ دی ؟

لاہور (ویب ڈیسک) ایک غائب دماغ پروفیسر بذریعہ ٹرین محوسفر ہے۔ راستے میں ٹی ٹی ٹکٹ چیک کرنے آیا توباوجود تلاشی کے پروفیسر صاحب کے پاس سے ٹکٹ برآمد نہ ہوا۔پروفیسر صاحب بہت پریشان ہوئے تو ٹی ٹی نے کہاکہ ۔۔کوئی بات نہیں میں آپ کوجانتاہوں آپ نے ٹکٹ ضرور لیاہوگالیکن شائد ٹکٹ کہیں گر گیاہے

اس لئے پریشان نہ ہوں۔پروفیسر نے جواب دیا: ارے میں پریشان کیسے نہ ہووں۔آخر مجھے پتہ کیسے چلے گاکہ مجھے جاناکہاں ہے؟نامور کالم نگار علی عمران جونیئر اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔یہی پروفیسر جب لاہور سے کراچی پہنچ کر ٹرین سے اترے تو برے برے منہ بنارہے تھے۔گھر پہنچ کر بیوی سے بولے۔’’تمہیں معلوم ہے کہ میں ٹرین میں سفر مجبوراً ہی کرتا ہوں اس بار جہاز میں سیٹ نہیں ملی تو ٹرین سے آنا پڑا۔اوپر سے ایسی سیٹ ملی کہ میری پیٹھ اس طرف تھی جس طرف ٹرین چل رہی تھی،جب بھی ٹرین میں ایسی سیٹ پر بیٹھنا پڑے تو طبیعت خراب ہو جاتی ہے۔‘‘۔۔ بیگم بولی۔۔ ’’تو آپ سامنے والے مسافر سے سیٹ بدل لیتے۔‘‘۔۔پروفیسرنے معصومیت سے جواب دیا۔۔سوچا تو میں نے بھی تھا لیکن سامنے والی سیٹ پر کوئی تھا ہی نہیں۔۔امرتسر ریلوے سٹیشن پر ٹرین چل پڑی،ایک سردار جی پاگلوں کی طرح ٹرین کے پیچھے بھاگ رہے تھے، میں ٹرین کے آخری ڈبے کے دروازے میں کھڑا ان کو بھاگتے دیکھ رہا تھا، بڑی مشکل سے جب وہ ٹرین کے پاس پہنچے تو میں نے ان کی طرف ہاتھ بڑھا دیا، سردار جی نے میرا ہاتھ تھاما اور ٹرین پر چڑھ گئے۔میں نے کہا‘‘واہ سردار جی بڑی ہمت ماری اے‘‘سردار جی بولے‘‘یار کھے تے سوا ہمت ماری، جیہنو چڑھان آیا سی او تے تھلّے رہ گیا‘‘۔
دو لڑکیاں ٹرین میں سفر کر رہی تھی ۔۔ایک بولی میں ایسے فوجی سے شادی کروں گی، جس کی تنخواہ دو لاکھ روپے ہو۔۔دوسری بولی اگر دو لاکھ والا نہ ملا تو ؟؟

وہ بولی تو ایک لاکھ والے سے کرلوں گی ۔۔دوسری بولی اگر وہ بھی نہ ملا تو ؟؟وہ بولی ستر ہزار والے سے کرلو گی ۔۔دوسری بولی وہ بھی نہ ملا تو ؟؟وہ بولی۔۔ پھر پچاس ہزار والا بھی چل جائے گا۔۔اوپر برتھ پر ایک فوجی لیٹا ہوا تھا درمیان میں اچانک بول پڑا۔۔ اگر بات پینتیس ہزار تک آجائے تو مجھے جگا دینا ۔۔ایک آدمی ٹرین میں جا رہا تھا۔ ٹکٹ چیک کرنے والا آیا اور کہنے لگا۔۔ٹکٹ دکھاؤ۔۔۔آدمی نے ٹکٹ نکال کر دکھایا اور کہا۔۔یہ لو۔۔ٹکٹ چیک کرنے والاکہنے لگا۔۔ یہ تو پرانا ہے!۔۔مسافر نے برجستہ کہا۔۔ٹرین بھی تو پرانی ہے یا ابھی شو روم سے نکلوائی ہے؟؟۔۔ہم بچپن میں جب بھی یہ لطیفہ پڑھتے تو زاروقطار ہنستے تھے۔۔ ایک شخص ریل میں بغیر ٹکٹ سفر کر رہا تھا ٹکٹ چیکر آیا اور اس سے ٹکٹ مانگا تو وہ بولا۔۔ہمارا ملک آزاد ہے ہم آزاد ہیں یہ سب گاڑیاں ہماری اپنی ہیں اس لئے میں نے ٹکٹ نہیں لیا۔۔ٹکٹ چیکر بولا۔۔ جیل بھی آپ کی اپنی ہے اس لئے اب حضور اس میں تشریف لے چلیں۔
اور اب چلتے چلتے آخری بات۔۔کسی نے باباجی سے سوال پوچھا، مردوعورت میں سے کون افضل ہوتا ہے؟؟ باباجی جس طرح کے ذہین انسان ہیں،برجستہ بولے۔۔مرد ہی افضل ہوتا ہے۔ پوچھنے والے نے پھر سوال کیا، اس کی کوئی مثال دیں؟ باباجی کہنے لگے۔۔ آپ نے کبھی کسی عورت کا نام ’’ افضل‘‘ سنا ہے؟ خوش رہیں اور خوشیاں بانٹیں۔۔