جو کام بلاول بھٹو ہفتوں میں نہ کرسکے ، شہباز شریف کے صاحبزادے نے 2 دن میں کر دکھایا ،

لاہور (ویب ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ ن کے نائب صدر اور قائد حزب اختلاف پنجاب حمزہ شہباز شریف کے جنوبی پنجاب کے دورے کے دوران مختلف سیاسی رہنماؤں کی مسلم لیگ ن میں شمولیت ۔راجن پور سے تعلق رکھنے والے سابق ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی شیر علی گورچانی نے حمزہ شہباز سے ملاقات کی

اور مسلم لیگ ن میں شمولیت اختیار کرتے ہوئے میاں نواز شریف اور میاں شہباز شریف کی قیادت پر اعتماد کا اظہار کیا ۔کہا کہ (ن) لیگ ہی پاکستان کے مسائل حل کرنے کی اہل ہے ۔ ملتان پہنچنے پر شاندار استقبال اور پیپلز پارٹی کے ٹکٹ پر تین دفعہ ایم پی اے منتخب ہونے والے اسحاق بچا نے مسلم لیگ ن میں شمولیت اختیار کی ۔ اسحاق بچا 1988، 1993 اور 2002 میں پیپلز پارٹی کے ایم پی اے رہے ہیں ۔ملتان سے برگیڈیئر (ریٹائرڈ) قیصر مہے نے بھی اپنے ساتھیوں سمیت مسلم لیگ ن میں شمولیت اختیار کی اور کہا کہ مسلم لیگ ن پاکستان کی سب سے بڑی جماعت ہے ، فخر ہے کہ اس کا حصہ بن رہا ہوں ۔خانیوال پہنچنے پر شاندار استقبال کے بعد سابقہ ایم پی اے جمیل شاہ نے متعلقہ حلقے کے ایم این اے افتخار نذیر کی موجودگی میں مسلم لیگ ن میں شمولیت اختیار کی ۔ جمیل شاہ 2008 میں ایم پی اے رہے ہیں ۔مظفر گڑھ کے حلقہ پی پی 271 سے پیپلزپارٹی کے ٹکٹ ہولڈر اور سرکردہ رہنما اختر علی گوپانگ کا مسلم لیگ ن کی قیادت پر اعتماد کا اظہار ۔ اپنے ساتھیوں سمیت مسلم لیگ ن میں شامل ۔شمولیت اختیار کرنے والے رہنماؤں نے موجودہ حکومت کی پالیسیوں کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ مہنگائی اور بیروزگاری نے عوام کی کمر توڑ دی ہے اور مسلم لیگ ن نے اپنے دور حکومت میں جو جنوبی پنجاب کی مثالی خدمت کی ، اس قافلے کا حصہ بننے جا رہے ہیں ۔