جہانگیر ترین اداروں کی جانب سے پوچھے گئے سوالات کا جواب دے رہے ہیں یا نہیں ؟

اسلام آباد ( ویب ڈیسک) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد احمد چوہدری نے کہا ہے کہ انہوں نے کہا کہ جہانگیر ترین اپنے خلاف کیسز کا جواب دے رہے ہیں،عمران خان کو دبائو میں نہیں لایا جاسکتا، جہانگیر ترین کہہ رہے ہیں کہ میں مقدمات کا سامناکروں گا۔ان خیالات کا اظہار

انہوں نےہفتہ کو پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ اور دیگر بھی موجود تھے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ مریم نواز شریف نے کورونا وباءکی وجہ سے اپنا دورہ کراچی ملتوی کیا، یہ مثبت پیشرفت ہے، سیاسی جماعتوں کو سنجیدگی اختیار کرنا ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن کو بھی انتخابات کے لئے ایس او پیز تیار کرنے چاہئیں کیونکہ الیکشن میں سیاسی پارٹیاں حصہ لیتی ہیں، اجتماعات اور جلسے جلوس ہوتے ہیں۔ بھارت میں بھی نریندر مودی کی الیکشن مہم کی وجہ سے کورونا کا پھیلائو زیادہ ہوا۔انہوں نے کہا کہ مذہبی رہنمائوں کا کردار بھی نہایت اہمیت کا حامل ہے، تراویح، نماز اور عید کے اجتماعات میں ایس او پیز پر عمل درآمد کے لئے علماءکرام اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صحافیوں کی بہتری کیلئے کام کر رہے ہیں، تمام پریس کلب پی آئی او سے رابطے میں ہیں، ہم صحافیوں کو وزیراعظم کے ہائوسنگ پروگرام میں شامل کر کے انہیں ان کا ذاتی مکان حاصل کرنے میں مدد فراہم کرنا چاہتے ہیں۔ حکومت نے خیبر پختونخوا میں عوام کو صحت کارڈز جاری کئے، سندھ حکومت نے ہمارے ساتھ ساتھ صحت کارڈ کا حصہ نہیں ڈالا جس کی وجہ سے سندھ میں صحت کارڈز پروگرام شروع نہیں ہو سکا، سندھ حکومت اپنے فیصلے پر نظرثانی کرے، پنجاب اور خیبر پختونخوا میں اس پروگرام پر عمل درآمد ہو رہا ہے۔ صحافیوں کو بھی خصوصی پیکیج کے تحت صحت کارڈز دیئے جائیں گے جس کے ذریعے وہ 10 لاکھ روپے تک علاج معالجہ کی سہولت حاصل کر سکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پرنٹ و الیکٹرانک میڈیا کے اشتہارات کے مسائل کو حل کیا جا رہا ہے، اے پی این ایس اور دیگر کے ساتھ صحافیوں کی تنخواہوں کی ادائیگی کے حوالے سے بات چیت ہوئی ہے، مالکان اور کارکن صحافیوں کی مدد کریں گے۔ رمضان المبارک میں اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں کمی آئی ہے، پاکستان کی معیشت میں استحکام نظر آ رہا ہے، اسے رواں دواں رکھنے کے لئے ضروری ہے کہ ہم ملک کی ترقی و خوشحالی کیلئے مل کر کام کریں۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *