حامد میر کا ایک تازہ ترین خصوصی تبصرہ

لاہور (ویب ڈیسک)نامور کالم نگار حامد میر اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔ پی ڈی ایم عمران خان کو حکومت سے نکالنا چاہتی ہے لیکن پی ڈی ایم نے ابھی تک یہ نہیں بتایا کہ عمران خان کو نکال کر پاکستان کے مسائل کیسے حل کئے جائیں گے؟ عمران خان کی حکومت نے

سینیٹ کے الیکشن میں اوپن بیلٹ کے لئے آرڈیننس جاری کرکے اپنی بوکھلاہٹ اور اندرونی کمزوریوں کو بےنقاب کر دیا ہے۔ صاف نظر آ رہا ہے کہ عمران خان شدید عدم تحفظ اور انجانے خوف کا شکار ہیں۔ پی ڈی ایم اور تحریک انصاف کی اس لڑائی میں پاکستان کے میڈیا، سول سوسائٹی، وکلا، مزدوروں اور طلبہ کے مسائل کا کوئی مستقل حل نظر نہیں آتا لہٰذا پی ایف یو جے اپنے لانگ مارچ سے پہلے مختلف شہروں میں صحافیوں، وکلا، مزدوروں اور سول سوسائٹی کو اکٹھا کرکے ایک مشترکہ لائحہ عمل تشکیل دینے کی کوشش کرے گی اور ایک وسیع البنیاد قومی اتحاد بنائے گی تاکہ آئین کے دائرے کے اندر رہ کر اُن مسائل کا حل تلاش کیا جائے جنہیں عمران خان حل نہیں کر سکے اور جن پر پی ڈی ایم کی بھی توجہ نہیں۔ حکومت اور اپوزیشن کی لڑائی پاور پالیٹکس ہے جبکہ ہمیں پاور نہیں، بولنے کی آزادی اور معاشی تحفظ چاہئے۔

Comments are closed.