حسان نیازی نے اصل اور اندرونی کہانی قوم کے سامنے رکھ دی

لاہور (ویب ڈیسک ) بیرسٹر حسان نیازی نے کہا ہے کہ سوشل میڈیا پر میرے حوالے سے چلنے والی خبریں جھوٹ پر مبنی ہیں جس سے میری ذات کو نشانہ بنایا گیا ہسپتال واقعہ میں بھی گاڑی جلانے کا الزام عائد کیا گیا، چونکہ میں سوشل میڈیا پر پولیس پر تنقید کرتا ہوں اس لیےخاتون کی

ذریعے آئی جی پنجاب پولیس کے ایماءپرجھو ٹی ایف آئی آر درج کروائی گئی، لاہور پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ اگر سی سی ٹی وی فوٹیج میں میری طرف سے عورت پر ہاتھ اٹھایا گیا ہو تو میں وکالت چھوڑ دونگا،میں شاہزوار بگٹی کے کیس سے کبھی دستبردار نہیں ہوں گا، ڈائریکٹربابر بخت ایف آئی اے سے کہتا ہوں کہ آپ اپنے علاقے میں نواب ہونگے لیکن میں اکبر بگٹی سے ڈرنے والا نہیں ہوں ،اکبر بگٹی کی بیوہ شہزادی نرگس نے کیس ختم کرانے کے لیے جھوٹی ایف آئی آر کٹوائی، میرے پاس تمام فوٹیج ہے موجود ہے، پنجاب بار کونسل نے میرا لا ئسنس بحال کر دیا ہے ، بیرسٹر حسان نے کہا کہ میشاءابو بکر کا میں صرف وکیل ہوں ، ایف آئی اے کی رپورٹ میں لکھا ہوا ہے کہ اکبر بگٹی کی آئی ڈی سے یہ تصویریں سوشل میڈیا پر بھیجی گئی ہیں ، التماس ہے کہ کوئی ایسی ویڈیو ہی دکھا دیں جس میں خاتون کو زدوکوب کرنے کا واقعہ ہو ، میں وزیراعظم سے نہیں بلکہ وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے گزارش کرونگا کہ انکا صوبہ ہے وہ اسکو دیکھیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *