حکومت اور اپوزیشن کے درمیان بیک ڈور رابطوں کا خواب چکنا چور ۔۔۔

کراچی(ویب ڈیسک)مخالف اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم کی قیادت نے بیک ڈورچینل سے رابطہ نہ کرنے سے متعلق حتمی پالیسی پرسختی سے کاربند ہونے کا فیصلہ کرلیا ،بلاول بھٹو،مولانا فضل الرحمن،اخترمینگل نے بعض حلقوں کی طرف سے غیراعلانیہ طورپر ملاقات کی کوششوں ،انفرادی رابطوں پررسپانس نہ دینے پراتفاق کرلیا ،

فون کالزبراہ راست وصول کرنے کے علاوہ ملاقاتوں کے لئے آنے والی شخصیات سے بندکمروں میں ملاقاتوں کی پالیسی تبدیلی کردی گئی ، اس امرپراتفاق کرلیا گیا کہ کسی بھی پارٹی کے سربراہ سے بعض حلقوں کی طرف سے انفرادی رابطوں یا ملاقات کی کوششوں کی حوصلہ افزائی نہیں کی جائے گی ، ذرائع کا کہنا ہے لاہورجلسہ کے بعد بیک ڈورچینل سے پی ڈی ایم کی قیادت سے انفرادی رابطوں کی متعدد کوششیں کامیاب نہیں ہوسکی ہیں، اہم حلقوں کی جانب س پیپلزپارٹی قیادت سے انفرادی رابطہ کی کوشش کی گئی ، پی ڈی ایم سربراہ مولانا فضل الرحمن کے قریبی حلقوں کے توسط سے بھی بات چیت کرنے کی خواہش کا اظہارکیاگیا،اخترمینگل سے بھی انفرادی رابطہ پربعض حلقوں کوکامیابی نہیں ملی ، ذرائع کا کہنا ہے پی ڈی ایم قیادت نے براہ راست فون کالزاٹینڈ کرنا بھی ترک کردیا ہے ، اس دوران ملاقات پراصرارکرنے والی بعض شخصیات سے پیشگی تعارف اورملاقات کے مقاصد معلوم کیے بغیران سے ملنے سے گریز کی پالیسی اپنارکھی ہے ، پی ڈی ایم رہنماؤں کی سیاسی مصروفیات کوبھی انتہائی خفیہ رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ۔

Comments are closed.