خان صاحب : اب اور کچھ نہیں ہونا ، آپ سیلیکٹرز کے ساتھ سیدھے ہو جائیں ،

لاہور (ویب ڈیسک) نامور کالم نگار جاوید چوہدری اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔میں آج اس مشیر کے بارے میں بھی لکھنا چاہتا تھا جس نے چند دن قبل وزیراعظم کو مشورہ دیا تھا آپ سلیکٹرز کے ساتھ سیدھے ہو جائیں‘ وزیراعظم نے وجہ پوچھی تو اس نے جواب دیا‘ ہمارا گراف دو

برسوں میں بہت نیچے چلا جائے گا‘ اپوزیشن آپ کو پانچ سال پورے دے کر 2023کے فیئر الیکشن کا مطالبہ منوا چکی ہے لہٰذا اگلا وزیراعظم شہباز شریف ہو گا یا بلاول بھٹو‘ حکومت الیکٹورل ریفارمز کا بل پاس کرا کر بھی ای وی ایم لا سکے گی اور نہ اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دلا سکے گی لہٰذا ہمارے پاس سیاسی قربانی کے سوا کوئی آپشن نہیں بچتا‘ آپ سیدھے ہو جائیں۔زیادہ سے زیادہ الیکشن کمیشن فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ سنا دے گا یا پھر اتحادی نکل جائیں گے لیکن ہم پھر گلی گلی جا کر دنیا کو بتائیں گے وہ کون تھے جنھوں نے شہباز شریف کے خلاف فیصلہ نہیں ہونے دیا اور بلاول بھٹو اور آصف علی زرداری کو قید میں نہیں جانے دیا‘ یہ مشورہ وزیراعظم کو ٹھیک لگا لیکن وزیراعظم کے پیر صاحب نے یہ فرما کر انھیں روک دیا ’’ابھی وہ وقت نہیں آیا‘‘ یوں فیصلہ رک گیا لیکن ان کو خبر ہو گئی جن کو خبر نہیں ہونی چاہیے تھی‘ اس کے بعد کیا ہوا انکشافات کا یہ سلسلہ چلتا رہے گا ۔۔

Comments are closed.