خواجہ آصف کے کیس میں حیران کن انکشاف

اسلام آباد (ویب ڈیسک)وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے بتایا ہے کہ سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ (ن) کے تاحیات قائد نواز شریف کا پاسپورٹ 16 فوری کو منسوخ کردیا جائے گا ۔وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اقامے والے اور منی لانڈررز بے نقاب ہو رہے ہیں

اس لئے واویلا کر رہے ہیں کہ ہم سے انتقام لیا جا رہا ہے ، مذاکرات کے دروازے کھلے ہیں جس نے بات کرنی ہے آ جائے ۔انہوں نے خواجہ آصف کی گرفتاری سے متعلق کہا کہ یہ سب بے نقاب ہوگئے ہیں، اگر میں وزیرداخلہ ہوں اور اقامہ لوں تو اس کا مطلب ہے کہ دال میں کچھ کالا ہے ، مطلب میرا، میری دھرتی پر ایمان نہیں ہے ۔ معاون خصوصی ڈاکٹر بابر اعوان نے کہا مریم نواز نے کہا ان کے والد کو اقامے میں غلط سزا ہوئی ہے اسکی وضاحت ضروری سمجھتے ہیں کہ اقامہ رہائشی پرمٹ کو کہتے ہیں جو قابل فخر پاکستانی محنت کش ورک پرمٹ پر باہر جا کر زرمبادلہ بھیجتے ہیں ان پر ہم فخر کرتے ہیں ۔ انہوں نے کہا سیاسی اقامہ کے ذریعے منی لانڈرنگ، چوری اور کمیشن کی ناجائز آمدن ملک سے باہر جاتی ہے ،جعلی ملازمت کے معاہدے ہوتے ہیں۔ ماضی میں اعلیٰ عہدیداروں احسن اقبال، خواجہ آصف اور دیگر پارٹی کے لوگوں کو اقامہ حاصل کرنے کی ضرورت کیوں پیش آئی؟ چینی والا، پاپڑ والا سنا ہوگا اب میں چاول والا بتا رہا ہوں، خواجہ آصف والے کیس میں بغیر کسی بزنس کے کروڑوں روپے کا سودا چاول کی برآمد کے طریقے سے کیا گیا۔ ایک سال میں بغیر کسی کاروبار کے 10 کروڑ روپے پہلے یہاں سے ادھر گئے اور پھر ادھر سے منی لانڈرنگ کے ذریعے یہاں آگئے ۔بابر اعوان نے کہا یہ چاہتے ہیں نیب دفتر کو تالہ لگا کر ایلفی ڈال دی جائے اور چابی نواز شریف کو دیدیں۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا جونہی نواز شریف کے پاسپورٹ کی میعاد ختم ہوگی وہ پاکستان واپس آکر اپنے پاسپورٹ کی تجدید کی درخواست کریں گے ، دوسری صورت میں میعاد ختم ہونے پر وہ غیر قانونی تصور ہونگے ، نواز شریف کو عدالت کی دی ہوئی سزا پوری کرنی ہے ۔

Comments are closed.