سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اچانک بڑا اضافہ کردیا گیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک ) وفاقی وزارت خزانہ نے یکم مارچ 2021 سے گریڈ ایک سے گریڈ 19 تک کے وفاقی ملازمین کی بنیادی تنخواہوں میں 25 فیصداضافے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیاہے، گریڈ ایک سے19 کے ملازمین شامل ہیں، جبکہ عملدرآمد کے حوالے سے متعلق مسائل کے حل کےلیے ایڈیشنل سیکرٹری کی قیادت

میں کمیٹی تشکیل دے دی، وزارت خزانہ کی جانب سے تخفیف تفاوت الائونس کے آفس میمورنڈم کے مطابق 25 فیصد تخفیف تفاوت الائونس کا اطلاق ان ملازمین پر نہیں ہوگا جو پہلے سے اضافی الائونس یا بنیادی تنخواہ کے 100 فیصد مساوی یا اس سے زیادہ الائونس لے رہے ہیں۔ 25 فیصد تخفیف تفاوت الائونس 2017 کی بنیادی تنخواہ کے سکیل کے مطابق ہو گا،ا لائونس کا اطلاق گریڈ ایک سے گریڈ 19 تک کے تمام سرکاری ملازمین بشمول وفاقی سیکرٹریٹ اور ملحقہ محکموں پر ہو گا۔ 58 اداروں اور محکموں کے ملازمین پر اس الائونس کا اطلاق نہیں ہو گا کیونکہ وہ پہلے سے ہی اضافی الائونس یا بنیادی تنخواہ کے برابر اور اس سے زیادہ الائونس حاصل کر رہے ہیں،وزارت خزانہ کے ایک اور آفس میمورنڈم کے ذریعے تخفیف تفاوت الائونس کے اطلاق سے متعلق مسائل کے حل کیلئے ایڈیشنل سیکرٹری ریگولیشنز وزارت خزانہ کی قیادت میں کمیٹی کا قیام بھی عمل میں لایا گیا ہے۔ کمیٹی کے دیگر ارکان میں جوائنٹ سیکرٹری ریگولیشنز فنانس ڈوژن، ڈپٹی ملٹری اکائونٹنٹ جنرل، ایڈیشنل اکائونٹنٹ جنرل پاکستان ریونیو اور متعلقہ وزارتوں اور ڈویژنوں میں جوائنٹ سیکرٹریز کے عہدے کا افسر شامل ہوگا جبکہ ڈپٹی سیکرٹری (آر آئی) وزارت خزانہ کمیٹی کے سیکرٹری کے فرائض سرانجام دیں گے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.