سنیل گواسکر بھی بول پڑے

ممبئی (ویب ڈیسک) سابق بھارتی کرکٹر سنیل گواسکر نے کہا ہے کہ کوہلی کی قیادت میں بھارتی ٹیم کو ہمیشہ جیت ملی ہے ۔تاہم رواں سال ستمبر میں ویرات کوہلی کا بیان ون ڈے کپتانی سے ہٹانے کی وجہ ہو سکتا ہے۔بھارت کے سابق سٹار بلے باز سنیل گواسکر میڈیا سے گفتگو کررہے تھے ۔

سنیل گواسکر نے کہا کہ میں نے ویرات کوہلی کی پریس کانفرنس دیکھی اور مجھے لگتا ہے کہ اس لائن کو تبدیل کیا جا سکتا تھا کہ میں ٹیسٹ اور ون ڈے میں بھارت کی قیادت کرنے کے لیے دستیاب ہوں۔سنیل گواسکر نے کہا کہ ویرات کوہلی کے پاس ہر جگہ جیتنے کا ریکارڈ ہے، اُنہوں نے آئی سی سی ایونٹس نہیں جیتے لیکن دو طرفہ ایونٹس جیتے ہیں، کوہلی کی قیادت میں ہمیشہ بھارتی ٹیم کو فتح ملی ہے۔سنیل گواسکر کا کہنا تھا کہ لوگوں کے پاس کوہلی کی قائدانہ صلاحیتوں سے ناخوش ہونے کی کوئی وجہ نہیں ، میرا اندازہ ہے کہ اصل میں ایک لائن ہی اس کی وجہ ہو سکتی ہے جہاں سے یہ معاملہ شروع ہوا تھا۔سنیل گواسکر نے مزید کہا کہ ’مجھے یہی لگتا ہے کہ ستمبر میں جو ویرات کوہلی نے ٹی ٹوئنٹی کپتانی چھوڑتے وقت بیان دیا تھا، اُسی وجہ سے اُنہیں ون ڈے کی کپتانی سے ہٹایا گیا ہے۔‘واضح رہے کہ بی سی سی آئی کی جانب سے روہت شرما کو ون ڈے ٹیم کا کپتان بنائے جانے کے بعد بھارتی کرکٹ میں نیا تنازعہ کھڑا ہوگیا ہے۔ٹیسٹ ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی ہیں، جبکہ جنوبی افریقہ کے خلاف ہونے والی سیریز میں روہت شرما کو ٹیسٹ سے باہر رکھا گیا جبکہ ویرات کوہلی نے ون ڈے کھیلنے سے معذرت کرلی۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کوہلی نے کہا کہ میں سلیکشن کے لیے دستیاب تھا، دستیاب ہوں اور ہمیشہ بھارتی ٹیم کی سلیکشن کے لیے دستیاب رہا ہوں، میں ون ڈے کرکٹ کھیلنے کے لیے بے تاب تھا۔انہوں نے بتایا کہ میں نے ٹی ٹوئنٹی کی کپتانی چھوڑنے کا خود کہا سلیکشن کمیٹی نے مجھ سے ٹیسٹ ٹیم کی سلیکشن کا پوچھا اور بتایا کہ میں ون ڈے کا کپتان نہیں ہوں ۔

Comments are closed.