سچ کہتے ہیں وقت ہمیشہ ایک سا نہیں رہتا :

لندن(ویب ڈیسک) سچ کہتے ہیں وقت ایک سا نہیں رہتا اور دولت مند ہونے کی خواہش ہر کسی کو ہوتی ہے مگر آئی دولت کو سنبھالنا کر کسی کے بس کی بات نہیں ہوتی۔ آپ نے لوگوں کے غریب سے امیر اور امیر سے کنگال ہونے کے کئی واقعات سن اور دیکھ رکھے ہونگے ۔ ایک بر طانوی لڑکی بھی

انہی لوگوں میں شامل ہے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس لڑکی کا نام کیلی راجرز نے ہے جس نے 2003ءمیں 18لاکھ پاﺅنڈ (تقریباً 39کروڑ 15لاکھ روپے) کی لاٹری جیتی۔ اس وقت اس کی عمر صرف 16سال تھی چنانچہ وہ برطانیہ کی لاٹری جیتنے والی کم عمر ترین لڑکی قرار پائی۔ اب تک اس کا یہ اعزاز قائم ہے تاہم کیلی اتنی بڑی رقم کو سنبھال نہ سکی۔رپورٹ کے مطابق کیلی نے یہ رقم لگژری گاڑیوں پارٹیوں اور پرتعیش طرز زندگی پر اڑا ڈالی۔ اس کے علاوہ وہ دوستوں اور رشتہ داروں پر بلاسوچے سمجھ رقم خرچ کرتی رہی اور چند سال بعد ہی کنگال ہو گئی۔ کیلی، جس کی عمر اب 33ہے اور وہ چار بچوں کی ماں ہے، کو جب کروڑ پتی سے واپس کنگال بننے پر ہوش آیا تو وہ دوستوں اور رشتہ داروں کو اس کا قصور وار ٹھہرانے لگی تاہم تب تک دوست اور رشتہ دار اسے اکیلا چھوڑ کر جا چکے تھے۔ گزشتہ دنوں کئی سال بعد کیلی ایک ٹی وی شو میں شریک ہوئی اور اس کی شکل اس قدر تبدیل ہو چکی تھی کہ لوگ اسے پہچان ہی نہ پائے۔ اب کیلی حکومتی مراعات پر گزارا کر رہی ہے۔ کیلی کا اس دوران کہنا تھا کہ ”ہر شخص غلطی کرتا ہے، مجھ سے بھی ہوئی۔ جب میں نے لاٹری جیتی تھی تو میں کم عمر تھی اور کسی کی بات سننے کو تیار ہی نہ تھی۔ کیلی نے کم عمری کے باعث یہ چوٹ کھانے کے بعد درخواست کی ہے کہ برطانیہ میں لاٹری جیتنے کی عمر کی کم از کم حد 18سال مقرر کی جائے،تاکہ اس سے پہلے نہ کوئی لاٹری جیت سکے اور نہ اس کا کیلی راجرز جیسا حشر ہو۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *