صدر مملکت عارف علوی نے بڑا اعتراف کر لیا

کراچی (ویب ڈیسک) صدر ِ مملکت عارف علوی نے ایک خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ لگتا تھا سب کو پکڑ لیں گے، لیکن اتنا آسان نہیں ہے احتساب کا عمل مزید مضبوط ہونا چاہیے چیف جسٹس سے درخواست ہے مقدمات تیزی سے چلوائیں بدعنوانی کے خلاف لڑائی جاری رہے گی ۔ حکومت کمزور طبقے کے لیے راشن اسکیم لائی

اب پاکستان کی برآمدات بڑھتی رہیں گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ احتساب کرنے آئے تھے ابھی بھی ہو رہا ہے بدعنوانی کے خلاف لڑتے رہیں گے پاکستان میں نظام کمزور ہے اور ہم سمجھ رہے تھے کہ بہت آسان ہے لوگوں کو پکڑیں گے اور پیسہ واپس لائیں گے لیکن جب آپ دوسرے اداروں پر انحصار کرتے ہیں۔ وقت زیادہ لگتا ہے تو ثبوت اور گواہ بھی غائب ہوجاتے ہیں احتساب کا عمل مزید مضبوط کرنے کی ضرورت ہے مقدمات تیزی سے چلیں گے تو کام بنے گا۔ وہ لوگ پھر مقبول ہوگئے ہیں جن کی آپ احتساب کی باتیں کرتے ہیں اس کے جواب میں صدرِ مملکت نے کہا کہ میں نہیں سمجھتا وہ مقبول ہیں مہنگائی اور مس گورننس کی وجہ سے جو کیفیات ہیں وہ کیری کرتی ہیں۔درآمدات او ربرآمدات بڑھ رہی ہیں لیکن جو ایکسپورٹ بڑھی ہیں وہ نیچے نہیں آئیں گے۔