صف اول کے تجزیہ کاروں کی رائے

کراچی (ویب ڈیسک) سینئر تجزیہ کار مظہر عباس نے کہا ہے کہ کسی ٹیم میں بار بار تبدیلیاں ہوں تو اس کا مطلب ہوتا ہے ٹیم نہیں کپتان کی کارکردگی خراب ہے۔ بینظیر شاہ نے کہا کہ حفیظ شیخ کبھی بھی وزیر خزانہ کیلئے عمران خان کی چوائس نہیں تھے۔ارشاد بھٹی نے کہا کہ

حکومت میں اتنی تبدیلیوں کی وجہ نااہلی، نالائقی،بیڈ گورننس، بری کارکردگی، تکبر اور آئی ایم ایف سے کڑی شرائط ہیں۔حسن نثار نے کہا کہ حکومت کی جانب سے بار بار تبدیلیوں کی وجہ خراب فیصلہ سازی، غیراطمینان بخش کارکردگی اور مایوسی ہے۔منیب فاروق نے کہا کہ حماد اظہر کو وزیرخزانہ بنانا بہتر فیصلہ ہے کیونکہ وہ منتخب رکن اسمبلی ہیں، انہیں بہرحال اپنے حلقے میں جانا ہے اور لوگ ان سے پوچھیں گے۔ سینئر تجزیہ کاروں نے ان خیالات کا اظہار نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں میزبان علینہ فاروق شیخ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔میزبان علینہ فاروق شیخ کے پہلے سوال وفاقی کابینہ میں ایک مرتبہ پھر تبدیلی، حفیظ شیخ فارغ، حماد اظہر کی بطور وزیرخزانہ تقرری کا نوٹیفکیشن، تحریک انصاف حکومت کی جانب سے اتنی تبدیلیوں کی وجہ کیا ہے؟ کا جواب دیتے ہوئے بینظیر شاہ نے کہا کہ منتخب وزراء حفیظ شیخ سے خوش نہیں تھے، وزراء کو گلہ تھا کہ فنڈز کی بات کرنے جائیں تو حفیظ شیخ انہیں گھنٹوں انتظار کرواتے پھر صحیح طرح بات بھی نہیں کرتے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *