ظاہر جعفر کے بیان پر اداکارہ نور بخاری کا حیران کن رد عمل

اسلام آباد (ویب ڈیسک) نور مقدم کیس میں ملزم ظاہر جعفر کو اب تک سزا نہ ملنے پر سابقہ اداکارہ نور بخاری نے شدید برہمی کا اظہار کیا ہے۔سوشل میڈیا سائٹ انسٹاگرام پر نور بخاری نے خصوصی اسٹوری شیئر کی جس میں اُنہوں نے پاکستان کے قانونی نظام پر شدید تنقید کی۔

نور بخاری نے اپنی انسٹا اسٹوری میں شدید غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ’ہمارے نظام کیلئے شرم کا مقام ہے۔‘سابقہ اداکارہ نے کہا کہ ’یہ ملزم اپنے ہر ایک جُرم کا اعتراف کر رہا ہے اور پھر بھی اس کو سزا نہیں مل رہی۔‘اُن کا یہ پیغام سوشل میڈیا پر تیزی سے وائرل ہورہا ہے جہاں صارفین بھی نور بخاری سے متفق نظر آرہے ہیں۔واضح رہے کہ نور مقدم کیس میں ظاہر جعفر سمیت تمام 12 ملزمان پر فرد جرم عائد کردی گئی۔نور مقدم کیس کے مرکزی ملزم ظاہر جعفر نے عدالت کو بتایا کہ جرم میں نے کیا تھا، ہتھیار میرے باپ کا ہے، قربانی اسلام میں بھی جائز ہے اور نور مقدم نے خود کو قربانی کے لیے پیش کیا، مجھے گھر میں قید کر دیں قید میں مجھے زدوکوب کرتے ہیں ، سزا دے دیں میں اڈیالہ قید خانے میں نہیں رہ سکتا۔ملزم نے کمرہ عدالت میں گھٹنوں کے بل بیٹھ کر معافی مانگی اور کہا کہ میں قید کی سلاخوں کے پیچھے دنیا سے چل بسنا نہیں چاہتا، میری شادی ہونی چاہیے۔یاد رہے کہ نور مقدم کیس کی مسلسل سماعت جاری ہے ۔

Comments are closed.