عائشہ اکرم اپنے ساتھی ریمبو کو ہسپتال سے ملنے والی تنخواہ کا آدھا حصہ کس چکر میں دیتی رہی ؟

لاہور(ویب ڈیسک ) مینار پاکستان واقعے کی متاثرہ خاتون آئشہ اکرم نے اپنے ساتھی ریمبو سے متعلق خوفناک انکشافات کردیئے ۔عائشہ اکرم نے یوم آزادی کے موقع پر پیش آنے والے افسوسناک واقعے کا ذمہ دار بھی ساتھی ریمبو کو ٹھہر ادیا ہے۔نجی ٹی وی چینل کی ایک رپورٹ کے مطابق یوم آزاد ی کے موقع پر

چھیڑ خانی اور زدوکوب کا نشانہ بننے والی متاثرہ خاتون اور ٹک ٹاک سٹارعائشہ اکرم نے ڈی آئی جی انویسٹی گیشن شارق جمال کو اپنا تحریری بیان جمع کروا یا ہے جس میں کہاگیا ہے کہ یوم آزادی کے موقع پرگریٹر اقبال پارک جانے کا پلان ریمبو نے بنایا جبکہ ریمبو نے میری متعدد نازیبا ویڈیوز بنارکھی ہیں اور ان ویڈیوز کے ذریعے مجھے پریشرائز کرتا ہے۔عائشہ اکرم کے بیان کے مطابق میں اپنی آدھی تنخواہ ریمبو کو دیتی تھی جبکہ وہ پریشرائز کر کرکے مجھ سے اب تک 10لاکھ روپے لے چکا ہے، ریمبو اپنے ساتھی بادشاہ کے ساتھ مل کر ٹک ٹاک گینگ چلاتا ہے۔ ریمبو چو نکہ میرے ساتھ سائے کی طرح موجود رہتا تھا اس لئے پولیس کو نہیں بتا سکی ، اب ریمبو کو پیسے دے دے کر تھک گئی ہوں اس لئے پولیس کی مدد لینے کافیصلہ کیا ہے۔عائشہ اکرم نے پولیس سے ریمبو کی گرفتاری کا مطالبہ کیا ۔دوسری جانب تازہ ترین خبروں کے مطابق ٹک ٹاکر خاتون عائشہ اکرم کے ساتھی ریمبو کو گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ڈپٹی انسپکٹر جنرل (ڈی آئی جی) انویسٹی گیشن شارق جمال کے مطابق متاثرہ خاتون نے واقعے کا ذمے دار ریمبو کو قرار دیا تھا جس پر اسے گرفتار کرلیا گیا ہے۔ ریمبو کے علاوہ دیگر چھ افراد کو بھی حراست میں لیا ہے، خاتون نے ریمبو سمیت 12 افراد کے خلاف تحریری بیان دیا تھا۔ ملزمان کو لاہور کے مختلف علاقوں سے گرفتار کیا گیا ہے۔ پولیس نے ریمبو کے ساتھی ملزم بادشاہ کی گرفتاری کیلئے راولپنڈی میں ریڈ کیا لیکن وہ فرار ہوگیا۔انہوں نے بتایا کہ عائشہ نے 400 افراد کے خلاف مقدمہ درج کرایا تھا جن میں سے 104 افراد کو گرفتار کیا گیا۔ شناخت پریڈ کے دوران متاثرہ خاتون نے چھ افراد کو شناخت کیا جن میں ارسلان، عابد، شہریار، مہران اور ساجد شامل ہیں۔ واقعے میں ملوث دیگر افراد کو ضمانت پر رہائی مل چکی ہے۔