عدلیہ میں بھی جمہوریت کا تجربہ کرنے کا اعلان

لاہور (ویب ڈیسک) چیف جسٹس پاکستان جسٹس گلزار احمد نے کہا ہے کہ عدالتی سسٹم میں زیادہ سے زیادہ جمہوری اقدار لائینگے اور اسی اقدار کے تحت ہم آگے بڑھیں گے، ججز وکلاء کے درمیان دیوار کافی حد تک مسمار کردی۔ججوں کی تقرریاں انکی مشاورت سے کیں مزید بھی کرینگے،وکلا منفی باتیں غلط رد عمل چھوڑ دیں،

فیصلہ پسند نہ ہو تو ججز سے جھگڑا نہ کریں،میں بھی گرم دماغ وکیل تھا، والد صاحب نے مجھے جج سے معافی مانگنے کیلئے بھیجا تھا۔ہڑتال کا کلچر ختم کرنے پر مبارکباد دیتا ہوں۔جبکہ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس قاسم خان نے کہا کہ دادا کے مقدمے کا فیصلہ پڑ پوتے کے وقت ہونے کا سلسلہ ختم کرنا ہوگا، اب پردہ پوشی ناممکن، جو کہتے ہیں رپورٹ ہو جاتا ہے۔ لاہور میں گزشتہ روز پنجاب بار کونسل کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس گلزار احمد کا کہنا تھا کہ کوشش کر رہے ہیں وکلا اور ججز کے درمیان عدالتوں سے متعلق معاملات کو باہمی مشاورت کے ساتھ لیکر آگے بڑھیں۔ا

Comments are closed.