عزم وہمت کی انوکھی داستان

تھامس ایڈیسن ایک جینیس تھا۔ جب وہ سکول جانے لگا تو تین مہینے بعد اس کی ماں کو اس کی ٹیچر کا خط ملا کہ آپ کا بیٹا بالکل مینٹل ہے اور زیادہ دیر کوئی بھی بات یکسوئی سے نہیں سن سکتا۔ آپ براہ مہربانی اسے خود ہی گھر پر پڑھائیں۔یہ ہمارے بس کا نہیں ہے۔

اس کی ماں نے اسے خط کے بارے میں کوئی منفی بات نہیں بتائی بلکہ بولا کہ تم باقی سب سے زیادہ ذہین ہو اس لیے سکول تمہارے قابل نہیں ہے۔ تھامس کافی چھوٹا ہی تھا جب اس کی سماعت مفقود ہو گئی۔ وہ بہت کم سن سکتا تھا۔عجیب بات یہ ہے کہ ہر چیز اس کے خلاف جاتی تھی لیکن پھر بھی وہ اتنا کامیاب اور امیر آدمی بنا کہ دنیا کو حیران کر گیا۔ تھامس نے بچپن میں ٹرینوں پر کینڈی اور اخبار بیچنے شروع کر دیے تھے۔ وہ کافی چست تھا اور اچھے گزر بسر کے پیسے کما لیتا تھا۔ جب وہ ٹرین کی ڈیوٹی کر رہا تھا تو ایک ٹرین سٹیشن آفیسر کا لڑکا غلطی سے ٹرین کے سامنے آگیا۔ تھامس نے اپنی جان پر کھیل کر اس کو ایک طرف دھکیلا اور اس کی جان بچائی۔ اس سانحے کے بعد تھامس بہت مشہور ہو گیا۔ انعام کے طور پر اس آفیسر نے اسے ٹیلی گراف میں نوکری دلوا دی۔ وہ ہفتے کے چھے دن لگاتار بارہ گھنٹے نوکری کا کام کرتا تھا۔ اس نے اپنے باس سے کہہ کر نائٹ شفٹ لگوا لی کیونکہ شام میں اس کا دماغ سب سے زیادہ ذرخیز ہوتا تھا اور شام میں وہ گھر پر سائنسی تجربوں اور مطالعے میں مصروف رہتا تھا۔اس کی ہر وقت کی تگودو اور مغر ماری رنگ لائی اور اس نے شام میں مطالعے اور تجربات کے نتیجے میں بہت سی ایجادات کیں۔ سب سے موثر اور مشہور ایجاد جو آج بھی ہمارے گھروں میں استعمال ہوتی ہے وہ تھی لائٹ بلب۔اس نے فونوگراف ایجاد کیا۔ کائینیٹو سکوپ بنایا اور دیگر ایجادات سے لوگوں کی زندگی سہل کی۔ وہ صرف ایک ذہین سائنس دان ہی نہیں تھا۔وہ ایک بہت منجھا ہوا بزنس مین بھی بن گیا تھا۔ لوگ اس کی صلاحیتوں پر اتنا رشک کرتے تھے کہ اس کو ’مینلو پارک کا جادوگر ‘ کہتے تھے۔ اس کی ایجادات تو اتنی زیادہ تعداد میں تھیں کہ اس نے کل پندرہ سو پیٹنٹ سائن کر رکھے تھے اور اس نے اپنی پوری زندگی میں کل ملا کر چودہ کمپنیوں کی بنیاد رکھی تھی۔ ایک عام انسان ایک کمپنی لگا کر اسے کامیابی سے چلا لے تو لوگ رشک کرتے ہیں۔ ایک آدھا بہرہ اور پاگل آدمی چودہ کامیاب کمپنیوں کا مالک بنا۔ اس نے سب سے بڑی کمپنی ’جنرل الیکڑک‘ کی بنیاد رکھی۔ جی ہاں وہ جی ای کا مالک تھا۔ وہ کمپنی جو تا حال دنیا کی سب سے بڑی بجلی کی کمپنی ہے اور شاید رہتی دنیا تک رہے گی بھی ۔ہارورڈ اور سٹین فرڈ کے نصاب میں جیای کی مینیج مینٹ تھیوریز پڑھائی جاتی ہیں۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *