عمران اینڈ کمپنی کی کارکردگی پر مظہر برلاس کا تازہ ترین تبصرہ

لاہور (ویب ڈیسک) نامور کالم نگار مظہر عباس اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔کام کوئی بھی کرسکتا ہے، میں عمران خان کے سیاسی کردار پر بات نہیں کر رہا مگر سماجی حوالوں سے یہ بات تو قابل تعریف ہے کہ عمران خان نے پاکستان جیسے ملک میں سرطان اسپتال بنایا۔ اسپتال کے

ساتھ ساتھ انہوں نے میانوالی میں شاندار تعلیمی ادارہ بھی قائم کیا۔ جہاں مستحق طلبا وہ تعلیم حاصل کر رہے ہیں جس کا وہ بھی تصور نہیں کرسکتےتھے۔حکومتوں میں شامل بعض وزراء بہت کام کرتے ہیں اور بعض صرف مصروف نظر آتے ہیں۔ مذہبی امور کے وفاقی وزیر نور الحق قادری نے گزشتہ تین سالوں میں شاندار کام کیا ہے۔ انہوں نے جہاں حج، عمرہ اور زیارات پر جانے والوں کے لئے شاندار کام کیا، کربلا معلی میں پاکستان ہائوس قائم کیا، سفری آسانیاں پیدا کیں، اقلیتوں کے مقدس مقامات پر سہولیات کے لئے بھی بھرپور کام کیا۔ مسیحیوں، ہندوئوں کے تہواروں پر خدمات انجام دیں، سکھوں کے لئے بند دروازے کھول دیئے۔ اسی طرح بدھ ازم کے مقدس مقامات پر بھی سہولیات کو یقینی بنایا۔اطلاعات کے وفاقی وزیر فواد چودھری اپنی وزارت میں جدت کی غرض سے کچھ منصوبے شروع کرنے والے ہیں مگروہ اصل خدمت جہلم کے لوگوں کی کر رہے ہیں۔ مصروفیات کے باعث انہوں نے ایسا اہتمام کر رکھا ہے کہ ان کے برادر عزیز فراز چودھری ہر وقت لوگوں سے رابطے میں رہتے ہیں۔ جہلم میں انڈسٹری، سڑکیں اور ادارے بن رہے ہیں، اسلام آباد کے لئے علی اعوان بہترین کام کر رہے ہیں۔اگر یہاں پنجاب کے انسانی حقوق اور اقلیتی امور کے وزیر اعجاز عالم آگسٹن کی بات نہ کی گئی تو بات ادھوری رہ جائے گی۔ انہوں نے کوشش کرکے ایچ ای سی سے پہلی مرتبہ تعلیمی اداروں میں اقلیتوں کے لئے دو فیصد کوٹہ مختص کروایا ہے۔ یوحنا آباد کو ماڈل ٹائون بنوا رہے ہیں۔قارئین کرام! جو بھی اس وطن کے لئے کام کرے گا وہ لوگوں کی نظروں میں محترم ہو جائے گا۔ جو لوگ وطن کے لئے کام کر رہے ہیں ان کی حوصلہ افزائی کیجئے، انہیں کام کرنے دیں کہ بقول پروفیسر سعید اکرم:نگاہِ ناز، نگاہِ نیاز بن جائے۔۔۔خیال و خواب کا کچھ تو جواز بن جائے

Comments are closed.