عمران خان ایسے نہیں جائے گا ، اس کے لیے یہ کام کرنا ہو گا ؟

سکھر(ویب ڈیسک) سابق صدر پاکستان آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ عمران خان کو نکالنے کیلئے اپوزیشن جماعتوں کو طریقہ کار بدلنا ہوگا، میں نے مشرف کو ایوان صدر سے نکالا، عمران خان کیا چیز ہے؟ نیازی کو نکالنے کیلئے قید خانے بھرنا ہونگے، انہوں نے کہا کہ تم سے ملک نہیں چل رہا،

رحم کرو چلے کیوں نہیں جاتے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بینظیر بھٹو کی برسی کے موقع پر ایک بڑے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اسی جلسے میں مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اب سلیکشن کا کاروبار بند کرنا ہوگا، 22؍ سال سیاسی کوڑا کرکٹ جمع کرکے پی ٹی آئی بنائی، آج چیخ چیخ کر کہہ رہا ہے مجھے کچھ نہیں آتا۔پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ 31 ؍جنوری تک عمران خان نےاستعفیٰ نہ دیا تو اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کرینگے، تاریکیاں چھٹنے والی ہیں، چوروں کے اس ٹولے کا وقت ختم ہوگیا، دمادم مست قلندر کا نعرہ لگا کراِس کٹھ پتلی کو بھگائینگے۔ صدر آصف علی زرداری نے جلسے سے بذریعہ ویڈیو لنک خطاب کیا۔ آصف علی زرداری کا کہنا تھا کہ ان سے پاکستان چل نہیں رہا اور چلے گا بھی نہیں، یہ میرا دعویٰ ہے ان سے پاکستان نہیں چلے گا، یہ کرکٹ ٹیم والے ہیں،ملک چلانے کیلئے اور لوگ چاہئیں، میں نے پہلے دن اسمبلی میں کہا ملک چلالو یا نیب چلا لو، نیب نے وارننگ دینے کا سلسلہ شروع کردیا ہےان کا کہنا تھا کہ چاہتا ہوں سب جماعتیں ایک سوچ پرآئیں مگرہم ایک دوسرے کو نہ بتائیں کہ ہمیں کیاکرنا ہے؟ کچھ ہم سے سیکھ لو، کچھ ہم سے سمجھ لو، ہوسکتا ہے میں نے یہ کام پہلے بھی کیا ہو۔ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نےخطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر 31 جنوری تک عمران خان نے استعفیٰ نہ دیا تو اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کرینگے، اسلام آباد پہنچ کر کٹھ پتلی وزیر اعظم کو اس کی کرسی سے گھسیٹنے کو تیار ہیں۔

Comments are closed.