لاہور : لڑکی کے انکشافات

لاہور(ویب ڈیسک) تھانہ سندر کی حدود میں واقعہ نجی ہوٹل میں پولیس کی جانب سے طالبہ کوتنگ کرنے کا معاملہ،کنزہ نامی خاتون نے اپنا ویڈیو بیان اور واقع کی سی سی ٹی وی فوٹیج افسران کو دکھا دی۔کنزہ طالبہ کا کہنا ہے کہ اس نے نجی ہوٹل میں قیام کیا ہوا تھا اچانک رات اڑھائی بجے

کسی نے دروازہ زور زور سے کھٹکھٹایا، دو پولیس اہلکار تھے جو زبردستی کمرے میں گھس آئے اور بے معنی سوال کرنے لگے۔ پولیس اہلکاروں کے دس منٹ بعد ایک اور پولیس آفیسر اندر گھس آیا اور مجھے تنگ کیا گیا۔ تیسرا پولیس اہلکار خود کو انچارج ظاہر کرتے ہو ئے داخل ہوگیا۔خود کو پولیس ٹیم کا انچارج کہنے والا پولیس آفیسر مجھے مغلطات بکتا رہا اور ڈراتا رہا۔حکام بالا سے گزارش ہے جو پولیس اہلکاروافسران اس طرح کسی کی بہن اور بیٹی کو تنگ کر رہے ہیں انکے خلاف ایکشن لیا جائے،ہوٹل میں میرے تمام شناختی دستاویزات جمع ہیں،آئی جی پنجاب انعام غنی نے لاہور کے نجی ہوٹل میں طالبہ کوتنگ کرنے کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او لاہور سے واقعہ کی فوری رپورٹ طلب کرلی۔

Sharing is caring!

2 responses to “لاہور : لڑکی کے انکشافات”

  1. Qari Abubakar says:

    Lrki sy wajah pochi jay wo akali kion ai or hotal malkan ko bhi investigat kiya jay or police satf ko Dismis from servise kiya jay lakin ya kbhi bhi ni ho ga kion kh yahan insaf bikta hy such ki koi kdr ni hy

  2. Bashir Ahmed Naaz says:

    Punjab police will be er become sincer,helpful or faithful as I myself after rendering my meritouris services as an activist in Pakistan Human Rights Commission for Bhakkar district for the ladt20 years have beco.e so fade up the oy a report of theft of my hand bag was not entered and after contacting IGP complaint on8787 was registered and I have submitted my leaving resigning in written to prime minister and honourable chief justice of Pakistan with copies to SSP Bhakkar and IGP.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *