لاہور : ماہرہ ذوالفقار کے کیس میں نیا موڑ

لاہور (ویب ڈیسک) ڈیفنس میں زندگی سے محروم ہونیوالی لڑکی مائرہ ذوالفقار کے کیس میں مزید انکشافات سامنے آئے ہیں۔ مائرہ اور ایک ملزم ظاہر جدون کی غیر اخلاقی تصاویر بھی سامنے آئی ہیں جبکہ مائرہ نے اختلافات ہونے پر ظاہر جدون کو مبینہ طور پر کپڑے اتروا کر زدوکوب بھی کروایا اور اس کی

اس حال میں تصاویر فیس بک پر اپ لوڈ کی تھیں جبکہ واقعہ سے دو ہفتے قبل مائرہ نے تھانے میں ملزم سعد بٹ کے خلاف سنگین الزامات کے تحت کارروائی کے لئے درخواست دی تھی۔ پولیس ذرائع کے مطابق ملزم ظاہر جدون اور مائرہ ایک عرصہ تک دوست رہے۔ مائرہ اور ظاہر جدون میں اختلافات ہوگئے تھے۔ ان تصاویر میں ظاہر جدون کو معافی مانگتے دیکھا جا سکتا ہے۔ ظاہر جدون راولپنڈی میں ایک 302 کے کیس میں بھی مطلوب ہے۔ شبہ ہے کہ ظاہر جدون نے اپنی بے عزتی کا بدلہ لینے کے لیے ماہرہ کو زندگی سے محروم کیا ہے۔ واقعہ سے 15 روز قبل مائرہ نے ملزم سعد کیخلاف پولیس کو درخواست دی تھی مگر ڈیفنس بی پولیس نے درخواست کے باوجود مقدمہ درج نہیں کیا تھا۔ مائرہ کی جانب سے پولیس کو دی جانے والی درخواست میں اس نے پولیس کو خطرے کا بتایا اور تحفظ مانگا تھا۔ مائرہ کی درخواست میں تحریر تھا کہ 17 اپریل کو صبح ساڑھے 4 بجے سعد بٹ گھر آیا، اْس نے بزور طاقت گاڑی میں بٹھایا اور گلبرگ، فتح گڑھ کے علاقے میں غلط کام کرنے کی کوشش کی۔ میں نے سعد بٹ سے جان بچانے کیلئے 15 پر کال کی تو سعد بٹ نے گاڑی سے نکل کر موبائل فون چھین لیا۔ شور مچانے پر لوگ جمع ہوگئے اور سعد بٹ گاڑی میں فرار ہوگیا۔ سعد بٹ نے جاتے ہوئے سنگین وارننگز دی ہیں لہذا تحفظ فراہم کیا جائے، پولیس کے مطابق ملزموں سعد بٹ اور ظاہر جدون کی گرفتاری کے لیے ریڈ کیے جا رہے ہیں۔

Comments are closed.