لاہور کی خاتون پروفیسر نے شہباز گل سے ڈگری لینے سے انکار کر دیا ،

لاہور (ویب ڈیسک) یونیورسٹی کانووکیشن کے دوران خاتون پروفیسر نے وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی شہباز گل سے ڈگری لینے سے انکار کردیا۔خبروں کے مطابق لاہورکالج فارویمن یونیورسٹی کے کانووکیشن میں خاتون پروفیسر شہبازگِل سے ڈگری لینے سے انکار کیا۔ کانووکیشن میں سمن آباد کالج کی خاتون پروفیسر کا نام پکارا گیا مگر وہ اسٹیج پرنہ آئیں۔

واقعہ کے حوالے سے صحافی کی جانب سے سوال پوچھے جانے پر شہباز گل کا کہنا تھا کہ جمہوریت میں ہر فرد کو اپنی رائے کا اختیار ہے۔دوسری جانب وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے سیاسی روابط شہباز گل سے ایک خاتون نے کانووکیشن کے دوران ڈگری لینے سے انکار کردیا جس کے بارے میں اب یہ دعویٰ سامنے آیا ہے کہ وہ مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق کی رشتے دار ہے۔خاتون پروفیسر ڈاکٹر فوزیہ عمران نے ایک ٹویٹ کے ذریعے شہباز گل سے ڈگری لینے سے انکار کیا اور کہا کہ شہباز گل کانووکیشن کے مہمان خصوصی بننے کے لائق نہیں،اس لئے ان سے ڈگری وصول نہیں کروں گی۔ دوسری جانب کالج پرنسپل کا کہنا ہے کہ خاتون پروفیسر کا ٹوئٹر اکاؤنٹ ہیک کیا گیا، خاتون پروفیسر نے ایسی کوئی بات نہیں کی۔اس حوالے سے وزیر اعظم کے معاون خصوصی کا کہنا ہے کہ کون کس سے ڈگری لیتا ہے یہ ہر کسی کا جمہوری حق ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ان کے ہاتھوں سے ڈگری لینے سے انکار کرنے والی خاتون خواجہ سعد رفیق کی رشتے دار ہے۔

Comments are closed.