لاہور ہائیکورٹ سے وارننگ جاری

لاہور (ویب ڈیسک ) چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس محمد قاسم خان نے ریمارکس دئیے ہیں کہ فیس بک، ٹوئٹر، انسٹاگرام اور دیگر سوشل میڈیا کنٹرول نہ ہوا توباہر سے بیٹھ کر بغاوت کیلئے ابھارا جا سکتا ہے۔اگر یہ کنٹرول نہ ہوا تو بیرون ملک بیٹھ کر پاکستان کیخلاف سازش کی جا سکتی

ہے،حکومتی عہدیدار اپنے آپ کو بچانے کیلئے کوشش کررہے ہیں وقت کی ضرورت کو نہیں سمجھ رہے۔ منگل کو لاہور ہائیکورٹ میں سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد کو نہ ہٹانے کے خلاف درخواست پر سماعت ہوئی۔ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس محمد قاسم خان نے دوران سماعت استفسار کیا اگر کوئی بیرون ملک سے نامناسب مواد اپ لوڈ کرے تو اسکے ٹرائل کیسے ہوگا۔ درخواست گزار نے کہا کہ قانون موجود ہے اگر کوئی بیرون ملک بیٹھ کر بھی کچھ اپ لوڈ کرتا ہے تو اس کے خلاف کاروائی ہو سکتا ہے ۔ چیف جسٹس محمد قاسم خان نے درخواست گزارکے وکیل پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ تماشہ نہ بنائیں اور مکمل تیاری کر کے پیش ہوں ۔ایڈووکیٹ اویس خالد نے کہا کہ سی آر پی سی کے سیکشن پانچ کے تحت ایسے ملزمان کا ٹرائل ہو سکتا ہے ۔ چیف جسٹس نے کہا کہ ایک آدمی اگر یوکے میں زندگی سے محروم ہو جاتا ہے تو کیا پاکستان میں ٹرائل ہو سکتا ہے ،نہیں ہو سکتا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *