لندن سے حیران کن خبر

لندن (ویب ڈیسک) برطانیہ کی سپریم کورٹ نے ایک ایسی خاتون کی اپیل کو مسترد کر دیا جس نے اپنی دولت کے ذرائع آمدنی کو ظاہر نہ کرنے اور انہیں چھپانے کی کوشش میں 16 ملین پاؤنڈ خرچ کردیے ۔ تفصیلات کے مطابق برطانوی قید خانے میں سزا بھگتنے والے بینکر کی بیوی زمیرا حاجی

اگر اپنی دولت کے ذرائع بتانے میں ناکام رہیں تو لندن میں اپنے قیمتی گھر اور گالف کورس سے محروم ہو جائیں گی ۔ عدالت نے کہا کہ یو ڈبلیو او کو دیئے گئے چیلنج میں قانون کا کوئی قابل بحث نکتہ نہیں اٹھایاگیا۔واضح رہے کہ مسز زمیرا کے شوہر سرکاری بینک سے لاکھوں پو نڈز غبن کرنے کے الزام میں آذربائیجان میں قید ہیں۔ مسز حاجی یوا کا ایک ذاتی ملکیت کا گھر نائٹس برج پر ہے جبکہ مل رائیڈ گالف کورس برکشائر میں ہے۔ فروری 2018 میں جب انہوں نےقانونی لڑائی کا آغاز کیا تو دونوں کے مشترکہ اثاثوں کی مالیت 22ملین پونڈزسے بھی زیادہ تھی۔ایک دہائی کے دوران ، مسز حاجی یوا نے این سی اے کی جانب سے اپنی دولت کے بارے میں تحقیقات پر اثر اندوز ہونے کے لئے 16 ملین پونڈز خرچ کئے۔یو ڈبلیو او کے تحت ، اگر کوئی شخص یہ وضاحت کرنے میں ناکام رہتا ہے کہ کس طرح قانونی طور پر دولت مند بن گیا ہے تو ، عدالتیں تفتیش کاروں کی جانب سےاس کا جرم ثابت نہ کرنے کے باوجود اس کی جائیداد ضبط کر نے کا حکم دےسکتی ہیں ۔ دوسری جانب مسز زمیرا حاجی نے کسی بھی غلط کام سے انکار کیا ہے اور ان پر برطانیہ میں کسی جرم کا الزام عائد نہیں کیا گیا ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.